مینڈیٹ کی دعویدارایم کیوایم کو دھچکا ،دعوے دھرے رہ گئے


کراچی(24نیوز) کہاں گئے دعوے، کہاں گئے کارکن، خالی کیوں رہ گئی کرسیاں، لیاقت آباداورنشترپارک میں خالی کرسیاں پنڈال کا منہ چڑاتی رہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے مینڈیٹ کی دعویدارایم کیوایم بہادرآباد اورپی آئی بی گروپ کا یوم تاسیس فلاپ ہوگیا۔ ایم کیوایم بمقابلہ ایم کیوایم تھا۔دونوں گروپس نے الگ الگ جگہ کا انتخاب کیا تھا۔ پی آئی بی کا پنڈال لیاقت آباد میں سجا۔ بہادر آباد والوں نے نشترپارک میں سیاسی طاقت کا مظاہر کیا۔

واضح رہے کہ جلسوں سے پہلے دونوں طرف سے پنڈال بھرنے کے کئی دعوے بھی کیے گئے۔ مگر کارکنان بھی رہنماوں کی طرح تقسیم ہوگئے۔کچھ ادھر گئے تو کچھ ادھر۔ شام 5 بجے شروع ہونے والے یوم تاسیس کا اجتماعات 3 گھنٹہ تاخیر سے شروع ہوا۔ متحدہ پی آئی بی کا دعویٰ تھا کہ جلسے کے لیئے 5000 کرسیاں لگائی گئیں ہیں۔ مگر کارکنان نے چھٹی کا روز ہونے کے باوجود بھی جلسہ گاہ کا رخ نہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں:سینیٹ اپوزیشن لیڈر انتخاب: آصف زرداری کی باتیں، گھاتیں اور ملاقاتیں 

 دوسری جانب  بہادر آباد والوں کی حالت میں کچھ اچھی نہیں تھی۔دعوے یہاں بھی بہت کیے گئے مگر صورتحال اس کے برعکس رہی۔کراچی کے مینڈیٹ کی دعویدار ایم کیوایم بہادر آباد 4500 کرسیاں بھرنے میں کامیاب رہی۔سیاسی تجزیہ کاروں نے ایم کیوایم پاکستان پی آئی بی اور بہادر آباد دھڑوں کے یوم تاسیس کو فلاپ قرار دے دیا۔