پولیس اہلکار کو رشوت لینا مہنگا پڑگیا

پولیس اہلکار کو رشوت لینا مہنگا پڑگیا


کراچی (ثمر عباس)ویسٹ گلبائی چوک پر ٹرک ڈرائیور سے رشوت لینے والے پولیس اہلکار کو معطل کریا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گلبائی چوک پر تعینات بدعنوان اہلکاروں نے رشوت کا بازار گرم کر دیا، کراچی کے علاقہ ویسٹ گلبائی چوک پرٹرک ڈرائیور سے رشوت لینے والے پولیس اہلکار کو معطل کریا گیا،ایس پی ویسٹ ٹریفک ڈاکٹر نجیب نے میڈیا رپورٹس کی خبر پر نوٹس لیتے ہو ئےٹریفک پولیس اہلکار لیاقت کو  معطل کردیا،چار سو روپے میں اہلکار نے خود ٹرالر میں بیٹھ کرحدود کراس کروادی۔

2 ہزار روپے میں شروع ہونے والی ڈیل 400 میں طے ہوئی،واقعہ کی فوٹیج سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی، گلبائی چوک پر اہلکار نے اپنی حدود میں ٹرالر کو روکا،رشوت کے پیسوں پر ٹرالر ڈرائیور اور اہلکار کی 5 منٹ تک بحث چلتی رہی، ٹریفک پولیس اہلکار چالان مشین ہاتھ میں پکڑے ڈرائیور پر دباؤڈالتا رہا۔

ڈرائیور نے منت سماجت کی کہا کہ غریب ڈرائیور ہوں میرا خیال کرو،اہلکار نے جواب دیا،آپ ہمارے بھائی ہو، میں نے آپ کو 1000 روپے نہیں بولے، ہمیں سب کچھ دیکھنا اور کرنا پڑتا ہے، اہلکار نے انکشاف ظاہر کیا کہ افسر کہتا ہے ہمیں بلا لیا کرو آپ خود پیسے نہ لیا کرو۔

آپ مجھے 400 دے دو، میں آگے کہوں گا آپ نے 5 سو دیے،ڈرائیور نے 350 روپے رکھ دیے لیکن اہلکار راضی نہ ہوا،جیسے ہی ڈرائیور نے 400 پورے کیے اہلکار کا رویہ تبدیل ہوگیا، ٹریفک اہلکار نے خود ٹرالر میں بیٹھ کر اپنی حدود کراس کروائی،مجھے اتارو اب آرام سے جاو تمہیں کوئی نہیں روکے گا۔

ذرائع کا کہناتھا کہ حادثات کی وجہ سے مخصوص اوقات میں ہیوی ٹریفک کے داخلے پر پابندی ہے،لیاقت کو معطلی کے ساتھ شوکاز نوٹس بھی دیا ہے،ایس پی ویسٹ کی جانب سے معاملے کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیٹی قائم کردی گئی۔