مشیر قومی سلامتی کا تقرر کیوں نہ ہوا؟ 24نیوز نے پتہ چلالیا

مشیر قومی سلامتی کا تقرر کیوں نہ ہوا؟ 24نیوز نے پتہ چلالیا


اسلام آباد(24نیوز) پی ٹی آئی حکومت کوبنے ساٹھ روز گزرگئے، تاہم سب سے اہم فورم قومی سلامتی کمیٹی تاحال غیرفعال ہے، وزیراعظم نے قومی سلامتی کمیٹی کا ایک بھی اجلاس نہیں بلایا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان آزادخارجہ پالیسی کاتاثر دینا چاہتے ہیں۔

حکومت کی غفلت، خود اعتمادی، یا کوئی اور معاملہ؟ ساٹھ روز گزر گئے،قومی سلامتی کمیٹی تاحال غیر فعال ہے، دو ماہ میں وزیراعظم نے قومی سلامتی کمیٹی کا ایک بھی اجلاس نہ بلایا، مشیر قومی سلامتی کا تقرر کیوں نہ ہوا؟ 24نیوز نے پتہ چلالیا۔

ذرائع کے مطابق حکومت قومی سلامتی ڈویژن ختم کرنے پرغور کر رہی ہے، وزیراعظم عمران خان آزاد خارجہ پالیسی کا تاثر دینا چاہتے ہیں،اس لیےوہ سیکورٹی معاملات پر متعلقہ اداروں سے مشاورت سے گریزاں ہیں، ذرائع کا کہنا ہے سعودی عرب اور چین کے دوروں پربھی متعلقہ فورم پر مشاورت نہیں کی گئی،جبکہ ایف اے ٹی ایف،سعودی امداد پر بھی متعلقہ فورم پر بات نہیں ہوئی۔

سابق دورحکومت میں سلامتی کمیٹی نے اہم فیصلے کیے،جن میں آپریشن ضرب عضب، ردالفساد اور دیگر شامل ہیں، نیشنل ایکشن پلان، فاٹا اصلاحات کا آغاز بھی سلامتی کمیٹی کے فیصلے پر ہوا، اس کے علاوہ کمیٹی میں افغانستان،امریکا،بھارت،مقبوضہ کشمیر سے متعلق مشاورت ہوتی رہی جبکہ سی پیک سکیورٹی،ایف اے ٹی ایف،این ایس جی سے متعلق بھی کمیٹی میں غور ہوتا رہا۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔