جے یو آئی(ف) کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام پابندی عائد

جے یو آئی(ف) کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام پابندی عائد


اسلام آباد( 24نیوز ) جے یو آئی ( ف) کا دھرنا روکنے کے لیے حکومت کا پہلا بڑا اقدام لیا، مولانا فضل الرحمان کی جماعت کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام پابندی لگا دی گئی ۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی حکومت نے فضل الرحمان کو کرارا جواب دیدیا،جمعیت علمائے اسلام ف کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام پر پابندی عائد کر دی،کابینہ سے منظوری کے بعد صوبوں کو مراسلہ جاری کردیا گیا، آزادی مارچ سے نمٹنےکے لئے سیکورٹی پلان بھی تیار کرلیا۔

مولانا فضل الرحمان اور اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے آزادی مارچ کی تیاریاں حتمی مراحل میں جاری ہیں جبکہ حکومت نےمظاہرین کو اسلام آباد داخلے سے روکنے کی تیاری بھی کرلی ہے،وزارت داخلہ نے جمعیت علمائے اسلام( ف) کی ذیلی تنظیم انصار الاسلام پر پابندی عائد کردی۔

انصار الاسلام کو کالعدم قرار دینےکے لئے آئین کی شق 256 کا سہارا لیا گیا،سخت ترین سیکورٹی اقدامات اٹھائے جارہےہیں،اسلام آباد میں 25 ہزار اہلکار لگانے کا منصوبہ ہے،پاک فوج کی خدمات آئین کے آرٹیکل 245 کے تحت حاصل کی جائیں گی۔

پنجاب ،خیبر پختونخوا اور آزاد کشمیر سے 20 ہزار پولیس کی نفری طلب کی جائے گی،مظاہرین سے نمٹنےکے لئےپولیس اہلکاروں کو غیرمسلح رکھنے اور صرف ڈنڈے فراہم کرنے کی تجویزدی گئی،مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے واٹر کینن اور آنسو گیس سے مدد لی جائے گی۔