پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بڑھ گیا

پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بڑھ گیا


کراچی(24نیوز) پاکستان کا کرنٹ اکاونٹ خسارہ 10 فیصد بڑھ گیا،دو ماہ کا خسارہ 2 ارب 72 کروڑ ڈالر کی رکارڈ سطح پر پہنچ گیا۔مجموعی قومی پیداوار بھی بڑھنے کی بجائے پہلے سے بھی کم ہو گئی۔

نئے مالی سال کے پہلے دو ماہ کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ جی ڈی پی کے 5.3 فیصد تک پہنچ گیا،  دو ماہ میں بیرونی کھاتوں میں حکومت نے آمدنی سے 2 ارب 72 کروڑ 10 لاکھ ڈالر زیادہ خرچ کیے،  گزشتہ سال اس عرصے کا خسارہ 2 ارب 47 کروڑ ڈالر تھا، اسٹیٹ بینک کے مطابق جولائی اور اگست میں اگرچہ ملکی برآمدات میں 4.5 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔  بیرون ملک مقیم پاکستانیوں نے بھی پہلے سے زیادہ ڈالر بھجوائے،  تاہم اس دوران درآمدی بل 11 فیصد بڑھ گیا۔

دو ماہ کے دوران حکومت کو اشیاء اور سروسز کی برآمدات سے مجموعی طور پر 4 ارب 95 کروڑ 40 لاکھ ڈالر حاصل ہوئے جبکہ درآمدات پر 11 ارب 58 کروڑ ڈالر خرچ ہو گئے۔ اسٹیٹ بینک کے مطابق دو ماہ کے دوران پاکستان کی مجموعی قومی پیداوار کا حجم 51 ارب 51 کروڑ 20 لاکھ ڈالر رہا،  جو گزشتہ سال اس عرصے سے 2 ارب 85 کروڑ ڈالر کم ہے۔

 

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔