پاکستان نےپاک ایران بارڈر پر باڑ لگانے کا فیصلہ کرلیا



اسلام آباد( 24نیوز ) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاک ایران بارڈر پر باڑ لگانے کا کام شروع ہوچکا ہے، سرحد کی مینجمنٹ کے لئے نئی فرنٹیئرکور تشکیل دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آبادمیں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخزانہ شاہ محمود قریشی کا کہناتھا کہ پاک ایران بارڈر پر باڑ لگانے کا کام شروع ہوچکا ہے،سرحد کی مینجمنٹ کے لئے نئی فرنٹیئرکور تشکیل دی ہے،کمانڈ کا ہیڈکوارٹرتربت میں قائم کیا گیا ہے،15سے 20 دہشت گردپاکستان میں داخل ہوئے،دہشت گردوں نے فرنٹیئر کور کی وردی پہن رکھی تھی، پاکستان نیوی کے 10، پاک فضائیہ کے 3 اور کوسٹ گارڈ کا ایک ملازم شہید کیا گیا۔

ان کاکہناتھاکہ لوگوں کو شناحت کر کے قتل کیا گیاہم نے تصدیق کے بعد ایران کو مراسلہ بھیجا ہے،ہم نےایران کودہشت گردوں کےبارے میں ثبوت دیے ہیں وہ ہمارا ہمسایہ براداراسلامی ملک ہے،ہم نے ایرانی وزیرخارجہ تک پاکستانی قوم کاغم وغصہ پہنچا دیا ہے،ایرانی وزیرخارجہ نے اس حملے کی پرزورمذمت کی ہے۔

وزیرخارجہ کا مزید کہناتھاکہ ہمارے پاس واقعےکےفرانزک ثبوت ہیں،دہشتگردبلوچ تنظیموں کے تانے بانے ایران سے ملتے ہیں،انہوں نے ایف سی کا یونیفارم پہن رکھا تھا،واقع کے سپیشل فرانزک شواہد موجود ہیں،ان کا کہناتھا کہ پاکستان اور ایران باہمی مشاورت سے یہ طے ہوا ہے کہ  بارڈر سینٹر بنائیں گے اور بارڈر پر باڑ لگائیں گے،ہم ایران کے ساتھ 950 کلومیٹر سرحد پر باڑ لگا رہے ہیں۔

M.SAJID KHAN

CONTENT WRITER