نواز شریف کیخلاف دونوں ریفرنسز کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کی استدعا منظور

نواز شریف کیخلاف دونوں ریفرنسز کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کی استدعا منظور


اسلام آباد(24نیوز) احتساب عدالت نے العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز کا فیصلہ ایک ساتھ سنانے کی خواجہ حارث کی استدعا منظور کرلی، جج ملک ارشد نے ٹرائل کی مدت میں توسیع کیلئے سپریم کورٹ کو خط لکھ دیا۔

عدالت نے نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث کی دونوں ریفرنسزکا فیصلہ ایک ساتھ سنانےکی استدعا منظور کرلی۔ خواجہ حارث نے دلائل میں کہا کہ احتساب عدالت نمبر1نے بھی تینوں ریفرنسز پر فیصلہ ایک ساتھ سنانے کا کہا تھا، لیکن صرف ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سنایا گیا۔خواجہ حارث نے کہا کہ تینوں ریفرنسزکا فیصلہ ایک ساتھ نہ آنے کی وجہ سے دیگر دو ریفرنس اس عدالت کو منتقل ہوئے۔

ریفرنس کی سماعت کیلئے سابق وزیراعظم کو اڈیالہ جیل سے احتساب عدالت لایا گیا، قبل اڈیالہ جیل کے باہر دو لیگی کارکنوں نے نواز شریف کے قافلے پر گُل پاشی کی کوشش کی، جنہیں پولیس اہلکاروں نے حراست میں لے لیا۔

احتساب عدالت نے نواز شریف کیخلاف ریفرنسز کی سماعت 27 اگست تک ملتوی کر دی، احتساب عدالت کے جج ملک ارشد نے ٹرائل کی مدت میں توسیع کیلئے سپریم کورٹ کو خط ارسال کر دیا ہے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔