احتساب عدالت فیصلہ, ن لیگ نے حکمت عملی تیار کرلی

احتساب عدالت فیصلہ, ن لیگ نے حکمت عملی تیار کرلی


اسلام آباد( 24نیوز )24دسمبر کو احتساب عدالت سے نوازشریف کے خلاف فیصلہ آنے کی صورت میں پارٹی اجلاس میں حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ احتساب عدالت کی جانب سے نواز شریف کے خلاف فیصلہ آنے کی صورت میں (ن) لیگ کا ایڈوائزری بورڈ معاملات دیکھے گا جس میں قومی اسمبلی اور سینیٹ کے مرکزی رہنما شامل ہوں گے۔ 

ذرائع کے مطابق 30 دسمبر کو لاہور میں مسلم لیگ (ن) کا یوم تاسیس منعقد کیا جائے گا، اگر نواز شریف کو سزا نہ ہوئی تو وہ یوم تاسیس سے خطاب کریں گے اور سزا کی صورت میں سینئر رہنما تقریب سے خطاب کریں گے۔ (ن) لیگ نے پارلیمنٹ میں بھی حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ جس کے لیے اپوزیشن کی دیگر جماعتوں سے بھی رابطے کیے جائیں گے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ سویلین بالا دستی پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائے گا جب کہ پارلیمنٹ کے اندر اور باہر سخت مؤقف اختیار کرنے کے علاوہ عوامی رابطہ مہم 30 دسمبر کے ورکرز کنونشن سے شروع کی جائے گی۔

منطق پرانی انداز نیا،نواز شریف حکومت پر برس پڑے

منطق پرانی انداز نیا،نواز شریف حکومت پر برس پڑے،کہتے ہیں کہ ہم نے قوم کو بجلی دی، دہشتگردی ختم کی،موجودہ حکومت نے مہنگائی دی ہے،غریب آدمی کیسے گزارا کرتا ہوگا۔

انہوں نے ہمارے زمانے میں عام آدمی راشن پانچ ہزار میں خریدتا تھا اب ساڑھے سات ہزار میں خرید رہا ہے،غریب آدمی کیسے گزارا کرتا ہوگا،جس کا دس ہزار بجٹ تھا اب ماہانہ سولہ ہزار روپے ہوگیا ہے۔ ملک میں مہنگائی کا طوفان ہے ، غریب لوگ کیسے گزارا کریں گے یہ بہت دکھ کی بات ہے ، آج کے اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی تنظیم سازی پر بھی بات چیت ہوئی ہماری حکومت نے لوڈ شیڈنگ اور دہشت گردی کا خاتمہ کیا ہم نے بجلی کے کارخانے لگائے، ہمارے دور کی ترقی کو عالمی سطح پر مانا گیا ،ن لیگ کی حکومت نے ہمیشہ ملک و قوم کی خدمت کی مسلم لیگ کی حکومت نے ملکی دفاع کو مضبوط کیا۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف نے 23 مارچ تک مسلم لیگ (ن) کی تنظیم سازی مکمل کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے رہنماؤں کو عوام سے قریبی روابط رکھنے اور کارکنوں کو نچلی سطح پر متحرک کرنے کی ہدایت کی۔ نواز شریف نے سوشل میڈیا کو بھی متحرک کرنے کی ہدایت کی اور مریم اورنگزیب کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دی جو میڈیا سے رابطہ رکھنے کے علاوہ حکومت کی جانب سے سوشل میڈیا پر کیے جانے والے پروپیگنڈے کا جواب دے گی۔

سابق وزیر اعظم ، مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف نے سینٹرل آرگنائزنگ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کی جو پارلیمنٹ ہاﺅس میں ہوا،اس سے قبل انہوں نے اپوزیشن لیڈرشہباز شریف سے ون آن ون ملاقات کی ،اجلاس کے بعد نواز شریف کو شہباز شریف،شاہد خاقان عباسی ،حمزہ شہباز اور دیگر قائدین نے الوداع کیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer