چیف جسٹس پیپلز پارٹی کی سابقہ صوبائی حکومت کی کارکردگی پر برہم

چیف جسٹس پیپلز پارٹی کی سابقہ صوبائی حکومت کی کارکردگی پر برہم


کراچی ( 24نیوز ) سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں مٹھی تھرپارکر میں بچوں کی ہلاکت پر ازخود نوٹس پر سماعت، چیف جسٹس پیپلز پارٹی کی سابقہ صوبائی حکومت کی کارکردگی پر برہم ہو گئے۔ ثنا اللہ عباسی کو محکمہ صحت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کی تحقیقات کرنے کا حکم دے دیا۔

 تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں مٹھی تھرپارکر میں بچوں کی ہلاکت پر از خود نوٹس پر سماعت ہوئی۔ دوران سماعت چیف جسٹس نےپیپلز پارٹی کی سابقہ صوبائی حکومت کی کارکردگی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے ریمارکس دئے کہ آغا خان ہسپتال کی رپورٹ کے مطابق بچوں کی اموات حکومت کی غفلت سے ہوئی۔

یہ بھی پڑھیں:نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث ناں ناں کرتے آخر کار مان گئے 

 سندھ میں گورننس نام کی کوئی چیز نہیں جس طرح مراد علی شاہ کی کارکردگی ہے کیا وہ اگلا الیکشن بھی لڑ رہے ہیں؟سندھ اور دیگر صوبوں کی کارکردگی میں واضح فرق نظر آتا ہے۔ سیکرٹری صحت فضل اللہ پیچوہو نے عدالت کے سامنے موقف اپنایا کے کوئی میری سنے تو میں کچھ کروں، میں اکیلا کیا کر سکتا ہوں۔ جس پر چیف جسٹس نے ریمارکس دئے کے سندھ حکومت سے اوپر کون ہے۔

پڑھنا نہ بھولیں:چیف جسٹس پاکستان نے خواجہ سراؤں کی سن لی 

صوبے کے سب سے بڑے سے تو آپ کی رشتہ داری ہے کیا انہیں صورتحال بتائی۔ عدالت نے ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی پر مشتمل کمیشن تشکیل دے دی۔ ثنا اللہ عباسی کو محکمہ صحت کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کی تحقیقات دو ہفتوں میں مکمل کرنے کا حکم دیتے ہوئے صوبائی پبلک سروس کمیشن کو ڈاکڑز اور عملہ کی فوری بھرتی کا کرنے کی ہدایت کردی۔