وزارت خزانہ کو فنانشل ٹاسک فورس کی کارروائیوں سے خطرہ


 24نیوز: وزارت خزانہ نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی ممکنہ کارروائی کا لائحہ طے کرلیا۔ پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل ہونے سے معیشت پر کوئی برا اثر نہیں پڑے گا۔ غیر ملکی قرضے اور بین الاقوامی امداد جاری رہے گی۔

تفصیلات کے مطابق گرے لسٹ میں شمولیت کے باوجود قرضے اور گرانٹس جاری رہیں گی۔ مشیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی سربراہی میں پاکستانی وفد نے واشنگٹن میں امریکی حکام سے ملاقاتیں کیں۔ مفتاح اسماعیل نے امریکی حکام کو پاکستان کی جانب سے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی سفارشات پر کیے جانیوالے اقدامات سے متعلق اعتماد میں لیا۔

یہ بھی پڑھیں:کراچی میں بجلی بحران کی ذمہ دار سندھ حکومت ہے: اویس لغاری

وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی کارروائیوں کا خطرہ ہے۔  جس کے لیے وزارت خزانہ نے حکمت عملی تیار کرلی گئی ہے۔ حکام کے مطابق پاکستان کے گرے لسٹ میں شامل ہونے سے بیرونی امداد پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔ غیر ملکی قرضوں اور گرانٹس کا سلسلہ بھی جاری رہےگا۔