قومی اسمبلی،فاٹا بل پیش نہ ہونے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ

قومی اسمبلی،فاٹا بل پیش نہ ہونے پر اپوزیشن کا واک آؤٹ


اسلام آباد (24نیوز)  قومی اسمبلی کا اجلاس فاٹا اصلاحات کی نذرہو گیا، اپوزیشن نے آج پھر واک آوٹ کردیا، حکومت کورم بھی پوراکرنے میں ناکام رہی، وزیر سیفران کا کہنا تھا کہ مزید مشاورت کی ضرورت پڑ گئی،بل ہرصورت ایوان میں لائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اسپیکر ایاز صادق کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس شروع ہوتے ہی اپویشن نے واک آوٹ کر دیا، اپوزیشن کے واک آؤٹ کے بعد پیپلز پارٹی کے رمیش لال نے کورم کی نشاندہی کر دی۔

نوید قمرنے نقطعہ اعتراض اٹھایا کہ حکومت اور آپ نے بار بار یقین دہانی کروائی کہ فاٹا اصلاحات کا بل آج لائیں گے,فیض آباد جیسے دھرنے ہوں تو حکومت مطالبات مانتی ہےمگرشرم کا مقام ہے کہ حکومت آج بھی بل ایجنڈے پرنہیں لائی۔

وزیرسیفران عبدالقادر بلوچ کا کہنا تھا کہ بل ہرصورت ایوان میں پیش کریں گے،مزید مشاورت کی ضرورت پڑ گئی ،چاہتے ہیں ایسی قانون سازی ہوجس پر سب کا اتفاق ہو,کورم پورا نہ ہونے پر اجلاس غیرمعینہ مدت کےلئے ملتوی کر دیا گیا۔