معصوم زینب کے قاتل کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست مسترد

معصوم زینب کے قاتل کو سرعام پھانسی دینے کی درخواست مسترد


لاہور(24نیوز)لاہور ہائیکورٹ کے مسٹر جسٹس صداقت علی خان کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے اشتیاق چودھری کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ زینب کے قاتل مجرم عمران کو پھانسی دینے کیلئے قانون میں ترمیم کی ضرورت نہیں ہے۔
مجرم عمران کو انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ 22 کے تحت سرعام پھانسی دی جا سکتی ہے، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ مجرم عمران کو اسی جگہ پھانسی دی جائے جہاں سے معصوم زینب کی لاش ملی تھی۔
درخواست گزار وکیل نے استدعا کی کہ عدالت انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ 22 کے تحت مجرم کو سرعام پھانسی دینے کا حکم دے،دو رکنی بنچ نے ابتدائی سماعت کے بعد درخواست قبل از وقت قرار دیتے ہوئے مسترد کردی اور قرار دیا ہے کہ ابھی مجرم عمران کے پاس اپیل کے تین فورم موجود ہیں اور جب تک مجرم کی تمام اپیلیں مسترد نہیں ہوجاتیں اس وقت تک پھانسی کے حکم پر عمل درآمد نہیں ہوسکتا۔