ٹرمپ نے روتے بلکتے بچوں کے چہروں پر خوشی لوٹا دی


واشنگٹن(24نیوز)روتے بلکتے بچوں نے ٹرمپ کو پالیسی بدلنے پر مجبور کردیا، امریکی صدر نے امریکا میکسیکو بارڈر پرغیر قانونی تارکین وطن کی حراست سے متعلق نیا حکم نامہ جاری کردیا۔
امریکی صدر نے غیر قانونی تارکین وطن سے متعلق نئے حکم نامے پر دستخط کردیے ہیں، جس کے تحت امریکا میکسیکو بارڈر پر حراست میں لیے جانے والے غیر قانونی تارکین اور ان کے بچوں کو اب ایک ساتھ رکھا جائےگا۔
اس سے پہلے جب ان بچوں کووالدین سے جدا کیا جاتا تو وہ بلک بلک کر روتے، ان کی یہ چیخیں سرحدیں عبور کرتی دنیا بھر میں پھیل گئیں جس نے سنا اس کا دل موم ہوگیا۔ پوپ فرانسز سمیت کئی عالمی رہنماﺅں نے امریکی پالیسی پر تنقید کی۔

 یہ بھی پڑھیں:  امریکہ نے پاکستان سے پھر ’’ڈو مور‘‘ کا مطالبہ کر دیا
ایک امریکی نیوز کاسٹر ان بچوں کی خبر سناتے ہوئے جذبات پر قابو نہ رکھ سکیں،امریکی صدر کہتے ہیں کہ ان بچوں کے مناظر دیکھ کر ان کی بیٹی اور بیوی کو بھی گہرا دکھ پہنچا ہے،ایوانکا ٹرمپ اگرچہ اس معاملے پر خاموش نظر آئیں لیکن اندرون خانہ وہ بچوں کے حق میں فیصلے کےلیے والد کو قائل کرتی رہیں اور انہوں نے کئی ارکان کانگریس کو بھی قائل کیا۔
امریکی انتظامیہ نے جنوبی ٹیکساس میں کم سے کم تین مراکز بنارکھے ہیں ، جہاں والدین سے زبردستی جدا کیے جانے والے بچوں کو رکھا جاتا ہے، ان میں بہت سے پانچ سال سےبھی کم عمر ہیں جو والدین سے بچھڑنے پر رو رو کر نڈھال ہوجاتے ہیں۔