ملائشین وزیراعظم کا دورہ پاکستان، 80 کروڑ ڈالر کے کارباری معاہدے متوقع

ملائشین وزیراعظم کا دورہ پاکستان، 80 کروڑ ڈالر کے کارباری معاہدے متوقع


اسلام آباد (24نیوز)ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد کے دورہ پاکستان کے دوران 80 کروڑ ڈالرز کے کاروباری معاہدے ہوں گے، ملائیشین کمپنی پروٹان پاکستان میں کار مینوفیکچرنگ کا معاہدہ کرے گی، چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف کا کہنا ہے کہ تیل و گیس کی کمپنی پیٹروناس بھی پاکستان میں واپسی پر غور کررہی ہے۔

مشیر تجارت رزاق داود اور چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملائیشیاء کے وزیر اعظم مہاتیر محمد کے دورہ پاکستان کے دوران ملائیشیاء کے کاروباری افراد 80 سے 90 کروڑ ڈالرز کی سرمایہ کاری کے معاہدے کریں گے ۔ ملائیشین کمپنی پروٹان پاکستان میں کار مینو فیکچرنگ کے لیے الحاج گروپ کے ساتھ معاہدہ کرے گی۔ زیادہ تر معاہدے کاروباری برادری کے درمیان ہوں گے تاہم دونوں حکومتوں کے درمیان بڑے تجارتی معاہدے نہیں ہوں گے۔

چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ ہارون شریف کا کہنا تھا کہ پاک ملائیشیاء بزنس فورم میں 25 سے 30 کاروباری وفود شریک ہورہے ہیں۔ ملائیشیاء کے ساتھ تین تجارتی معاہدے ہوں گے ای ڈاٹ کو ٹیلی کمیونیکیشن کا معاہدہ کرے گی ۔

پروٹان کارز الحاج گروپ کے ساتھ الیکٹرک کار مینو فیکچرنگ کا معاہدہ کرے گی جب کہ فوجی فوڈز حلال گوشت میں سرمایہ کاری کا معاہدہ کرے گی۔ ایک سوال کے جواب میں ہارون شریف نے کہا کہ ملائیشیاء کے ساتھ لانگ ٹرم تجارتی تعلقات قائم کرنا چاہتے ہیں۔ تیل و گیس کی ملائیشین کمپنی پیٹروناس پاکستان میں واپسی پر غور کررہی ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔