خیبر پختونخوا میں ڈینگی کے وار، صوبائی حکومت بے بس

خیبر پختونخوا میں ڈینگی کے وار، صوبائی حکومت بے بس


پشاور(24نیوز) خیبر پختونخوا میں ڈینگی کے وار جاری مگر صوبائی حکومت نے چپ سادھ لی،سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ابتک صوبے میں 2313 افراد میں ڈینگی بخار کی تصدیق مگر حالت اس سے بھی ابتر ہیں جبکہ وزیر صحت میڈیا پر بات کرنے سے کتراتے ہیں اعداد و شمار کے حوالے سے صوبائی دارلحکومت پشاور سرفہرست ہے .

صوبہ خیبر پختونخوا میں ڈینگی کے وار جاری،ڈینگی سے متاثرہ افراد کی تعداد 2313 سے تجاوز کر گئی، صوبائی دارلحکومت پشاور میں 1409 سے زائد افراد ڈینگی بخار میں مبتلا ہیں۔ پشاور کے ملحقہ علاقوں شیخ محمدی،شیخان بٹہ تل بڈھ بیر اور ملحقہ علاقے ڈینگی کے لپیٹ میں ہیں مگر وزیر صحت ہشام انعام اللہ حالات سے بے خبر ہیں۔ 

صوبے کے دیگر اضلاع میں بھی حالات نا گفتہ بہہ ہیں، مالاکنڈ ڈویژن میں ڈینگی مریضوں کی تعداد 400 تک پہنچ گئی،مردان ڈویژن میں 102,ہزارہ ڈویژن میں 276,کوہاٹ میں 50 افراد شکار ہوگئے۔ گزشتہ 24گھنٹے کے دوران مزید 169 کیسز رپورٹ ہوئے۔

محکمہ صحت خیبر پختونخوا کی روک تھام کے لیے اقدامات نہ ہونے کے برابر ہیں۔ متاثرہ علاقوں میں نہ اسپرے کی گئی اور نہ متاثرہ علاقوں میں ٹیمیں بھجوائی گئی مگر صوبائی حکومت سب اچھا کا راگ الاپ رہی ہیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔