امریکا میں شٹ ڈاؤن، متعدد سرکاری محکمے بند


واشنگٹن(24نیوز) امریکا میں شٹ ڈاؤن ہوگیا، متعدد سرکاری محکموں میں کام بند،  8لاکھ سرکاری ملازمین کو کرسمس پر تنخواہ نہیں ملے گی۔

میکسیکو کی سرحد پر دیوار تعمیر کرنے کے معاملے پر وائٹ ہاؤس کو ایوان نمائندگان اور امریکی سپریم کورٹ دونوں اطراف سے شدید مخالفت کا سامنا ہے اور اس صورتحال میں پس رہے ہیں امریکا کے وفاقی سرکاری ملازمین جن میں سے 8 لاکھ کے واجبات ادا نہ ہونے پر وہ اپنے سب سے اہم سالانہ تہوار کی خوشیاں بھرپور طریقے سے نہیں منا پائیں گے. گزشتہ روز امریکا کے ایوان نمائندگان نے حکومتی اخراجات کے بل کی منظوری سے پہلے ہی اپنا اجلاس جمعہ کی شام 7 بجے سے پہلے ملتوی کر دیا تھا. 

امریکی صدر کا اس شٹ ڈاون کا ذمہ دار ڈیموکریٹس کو قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ڈیموکریٹس کو اس بات پر فخر ہو گا کہ کاروبار حکومت ٹھپ ہوجائے، اپنی تازہ ترین ٹوئٹ میں انہوں نے کہا اب ڈیموکریٹس شٹ ڈاون کی ذمہ داری لیں.

امریکی سپریم کورٹ کی طرف سے تارکین وطن پر پابندی لگانے کی صدارتی درخواست کے مسترد کیے جانے پر بھی امریکی صدر آگ بگولا ہیں. انہوں نے سرحد پار کرکے آنے والے تارکین وطن کو چور لٹیرے، سمگلر اور امریکا کی سلامتی کے دشمن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ دیوار تو ہر صورت بنائی جائے گی .

امریکی صدر کو ایوان نمائندگان اور سپریم کورٹ کے خلاف محاذ آرائی پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا جا رہا ہے. ناقدین کا کہنا ہے کہ امریکی صدر کی ہٹ دھرمی نہ صرف انہیں بلکہ پورے امریکا کو نقصان پہنچا رہی ہے.

وقار نیازی(Waqar Niazi)

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔