تبدیلی سرکارنے ٹیچنگ اسپتالوں کو نئے سرے سے خود مختاری دینے کا فیصلہ کرلیا

تبدیلی سرکارنے ٹیچنگ اسپتالوں کو نئے سرے سے خود مختاری دینے کا فیصلہ کرلیا


لاہور (24 نیوز)وزیراعظم عمران خان نے پنجاب کے اسپتالوں میں اصلاحات کے نظام ایم ٹی آئی کے نفاذ پر زور دیا ہے،  کہتے ہیں اس نظام کے مخالف غریبوں کے مخالف ہیں مگر درحقیقت اس نظام سے غریبوں کے لیے مفت علاج بہت مشکل ہوجائے گا.

تبدیلی سرکارنےپنجاب بھرکے ٹیچنگ اسپتالوں کو2003 کے قانون کے تحت نئے سرے سے خود مختاری دینے کا فیصلہ کرلیا،اس حوالے سے وزیراعظم کے خیالات کیا ہیں آئیے جانتے ہیں۔ پی ٹی آئی جو اصلاحاتی نظام لانا چاہتی ہے اس سے غریبوں کا مفت علاج مشکل ہوجائے گا،سرکاری اسپتالوں کو نجی سیکٹر کے خود مختار بورڈ آف گورنرز چلائیں گے اور غریب عوام ان کے رحم وکرم پر ہوں گے۔

مجوزہ ایکٹ کے تحت ڈاکٹرز اور نرسز کی سرکاری ملازمت ختم ہوجائے اور یہ ادارے نیم سرکاری تصور ہوں گے،  بورڈ آف گورنر کسی بھی ڈاکٹر یا ملازم کو بھرتی اور برطرف کرسکے گا،مفت علاج فراہم کرنے یا فیس وصول کرنا بھی بورڈ کی صوابدید پرہوگا۔ مجوزہ قانون کے تحت ٹیچنگ اسپتالوں کو پرائیویٹ بزنس ماڈل کے تحت چلایا جائے گا،اسپتالوں کیلئےحکومت ون لائن بجٹ فراہم کرے گی،ہر ٹیچنگ ہسپتال کا الگ فنڈز قائم ہوگا اور اس فنڈ میں موجود رقم سے نفع کمانے کیلئے بورڈ آف گورنر اسے کاروبار میں انویسٹ کرسکے گا۔