کراچی والوں کا سب سے بڑا خواب


کراچی (24نیوز)لوگ سہانے مستقبل کے خواب دیکھتے،کامیابی کی امنگوں کو آنکھوں میں سجاتے ہیں لیکن کراچی کے لوگ سالہا سال سے ہر رات ایک ایسا خواب لیکر سوتے ہیں کہ یہ مسئلہ صبح تک نہیں ہوگا لیکن جو نہی آنکھ کھلتی ہے تو معاملہ جوں کا توں ہوتا ہے۔
تفصیلات کے مطابق کراچی کو پانی کی فراہمی کا منصوبہ 10 سال کی تاخیر کے بعد اب بھی خواب ہی ہے، دو سال میں منصوبے کا پہلے فیز بھی مکمل ہونے سے کوسوں دور نظر آتا ہے،ملک کا سب بڑا شہر کراچی پینے کے پانی کو ترس گیا،650 ملین گیلن پانی کی فراہمی شہر کو ناکافی ہوچکی ہے،مزید 1150 ملین گیلن روزانہ کی بیناد پر پانی شہر کی ضرورت ہے جو نہیں مل رہا۔
شہر میں پانی کی اس کمی کو پورا کرنے لئے منصوبہ کے فور 2007 میں تیار کیا گیا،جس کے تحت شہر کو تین مرحلوں میں اضافی 650 ملین گیلن پانی فراہم کیا جانا ہے،لیکن 10 سال تک یہ منصوبہ کاغذوں ہی پر ہی رہا۔
2016 کی اگست میں منصوبہ کے پہلے فیز کا افتتاح ہونا تھا جو تاحال مکمل نہ ہوسکا ،کے فور پروجیکٹ کے ڈائریکٹر اسد زامن کے مطابق منصوبے کو جلد مکمل کرنے کی کوشش کررہے ہیں،منصوبہ کا پہلے فیز 2019 میں مکمل کرلیا جائے گا ۔

کسی ادارے سے کچھ لینا دینا نہیں،سارا معاملہ ہی کالا لگتا ہے:نواز شریف
پانی کے اس منصوبے کو تین مرحلوں میں مکمل کرنے پر کل لاگت کا تخمینہ 12 ارب روپے لگایاگیاتھا جو اب 25 ارب روپے سے تجاوز کرچکا ہے،اس منصوبے کے لئے کینجھر جھیل سے 121 کلومیٹر لمبی نہر کھودی جائے گی۔ جس کے ذریعے شہر کو پانی کی فراہمی ممکن ہوسکے گی،لیکن شہریوں کا سوال ہے کہ ا?خر یہ منصوبہ مکمل کب ہوگا،، اور پانی کب ملے گا۔

اظہر تھراج

صحافی اور کالم نگار ہیں،مختلف اخبارات ،ٹی وی چینلز میں کام کا وسیع تجربہ رکھتے ہیں