نقیب قتل کیس: راؤ انوار کا 30روزہ جسمانی ریمانڈ منظور، نام ای سی ایل میں شامل

نقیب قتل کیس: راؤ انوار کا 30روزہ جسمانی ریمانڈ منظور، نام ای سی ایل میں شامل


اسلام آباد(24نیوز) سپریم کورٹ نے نقیب اللہ محسود ازخود نوٹس پر فیصلہ سنا دیا، فیصلے میں عدالت نے رائو انوار کا نام ای سی ایل میں شامل رکھنے کا حکم دیا، قتل کی تحقیقات کیلئے قائم جے آئی ٹی کو جلد کام مکمل کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے نقیب اللہ ازخود نوٹس کیس کا 4 صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کردیا۔نقیب اللہ ازخود نوٹس کیس نمٹاتے ہوئے عدالت نے رائوانوار سے متعلق جے آئی ٹی کو جلد تفتیش مکمل کرنے کی ہدایت کی۔علاوہ ازیں نقیب اللہ قتل کیس میں ملوث سابق ایس ایس پی ملیر راؤانوارکو30دن کے جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔اے ٹی سی نے راؤ انوار کا 21اپریل تک جسمانی ریمانڈ دے دیا۔

تحریری فیصلے میں کہاگیا ہےکہ نقیب محسود قتل اور رائو انور سے متعلق جے آئی ٹی تحقیقات شفاف اور بغیرکسی دباو مکمل کی جائیں۔جے آئی ٹی عدالتی احکامات اور میڈیا کی خبروں سے متاثر ہوئے بغیر اپنا کام کرے۔

واضح رہے کہ عدالت نے رائو انوار کا نام ای سی ایل میں شامل رکھنے کاحکم برقرار رکھتے ہوئے حکم دیا ہےکہ آئی جی سندھ رائو انوار کی حفاظت کے براہ راست ذمہ دار ہوں گے۔اس بات کو بھی یقینی بنایا جائے کہ محسود خاندان کے لوگ رائو انوار کی زندگی کیلئے کسی قسم کا خطرہ نہ بنیں۔