شیری رحمٰن پاکستان کی پہلی خاتون سینیٹ اپوزیشن لیڈر منتخب


24نیوز: پیپلز پارٹی نے اپوزیشن لیڈر کے تقرر کے معاملہ پر تحریک انصاف کو شکست دے دی۔ شیری رحمان سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر منتخب ہوگئیں۔

سینیٹ سیکرٹریٹ نے شیری رحمان کے اپوزیشن لیڈر منتخب ہونے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔ شیری رحمان سینیٹ میں بارویں جبکہ پیپلز پارٹی کی ساتویں اپوزیشن لیڈر ہیں۔ پیپلز پارٹی کو پہلی خاتون وزیر اعظم، پہلی خاتون اسپیکر قومی اسمبلی نامزد کرنے کے بعد سینیٹ میں پہلی خاتون اپوزیشن لیڈر منتخب کرانے کا منفرد اعزاز بھی حاصل ہو گیا ہے۔

شیری رحمان کو 34 ارکان سینیٹ کی حمایت حاصل تھی۔ جبکہ ان کے مدمقابل تحریک انصاف کے اعظم سواتی کو 19 ارکان کی حمایت حاصل تھی۔

  یہ بھی پڑھیں:پیپلزپارٹی نے ایک اورسیاسی شیرکاشکار کرلیا
اپوزیشن لیڈر منتخب ہونے کے بعد شیری رحمان کا کہنا تھا کہ قائد حزب اختلاف نامزد کرنے پر پارٹی قیادت کی شکرگزار ہیں، تحریک انصاف سمیت اپوزیشن کی تمام جماعتوں ساتھ لیکر چلیں گے۔

پڑھنا نہ بھولیں:تبدیلی کے دعویدار عمران خان کیلئے 50 تولے سونے کا تاج تیار

 پاکستان پیپلزپارٹی ہمیشہ جمہوریت اور اکثریت کے فلسلفے پر یقین رکھتی ہے۔ سینیٹ کو پہلے سے زیادہ مؤثر اور سرگرم بنائیں گے۔

 اس موقع پر  شیری رحمان کا کہنا تھا کہ سینیٹ میں حکومت کو جوابدہ بنانے کےلیے اپنا کردار ادا کریں گے۔ ہم وفاق کو مستحکم کریں گے۔ اپنا امیدوار لانا پی ٹی آئی کا حق تھا تحریک انصاف کو دعوت دیتے ہیں کہ ماضی کی طرح ہمارے ساتھ مل کر اپوزیشن کو توانا بنائیں۔ ہمیں امید ہے کہ پی ٹی آئی قومی اسمبلی کی طرح سنیٹ میں بھی ہمارے ساتھ کھڑی ہوگی ۔

ٖضرور پڑھیں:روشنیوں کے شہر سے اندھیرے ختم کرنے کیلئے پیپلز پارٹی کا عزم نو

شیری رحمان کے تقرر کے بعد ڈپٹی چیئرمین سیٹ سلیم مانڈوی والا ، خورشید شاہ،  قمر زمان کائرہ، روبینہ خالد اور چوہدری منظور نے قائد حزب اختلاف سینیٹ کے چیمبر میں جا کر انھیں سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر منتخب ہونے پر مبارکباد دی۔ اس موقعہ پر اپوزیشن لیڈر چیمبر میں زندہ ہے بھٹو زندہ ہے کہ نعرے گونجتے رہے۔