میاں نواز شریف نے بالآخر شکست مان لی


اسلام آباد (24 نیوز) سابق وزیر اعظم نوازشریف اور ان کی صاحب زادی مریم نواز برطانیہ نہیں جا سکتے۔ احتساب عدالت نے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد کر دی۔

پیشی کے دوارن احستاب عدالت نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جےآئی ٹی) سربراہ واجد ضیا کا بیان بھی ریکارڈ کر لیا۔

دوسری جانب سابق وزیراعظم نواز شریف نے سیاسی جماعتوں کو نگران حکومت کے معاملہ پر مذاکرات کی دعوت دے دی ہے۔

احتساب عدالت میں پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں نواز شریف نے کہا کہ نگران سیٹ اپ کے لیے اپوزیشن سے مشاورت ہو گی۔ جس سیٹ اپ پر اتفاق ہو گا اسے ہماری پارٹی سپورٹ کرے گی۔

یہ بھی پڑھئے: شیخ رشید کا ایک اور دھماکہ،نواز شریف کو دل کی بات کہہ دی

مریم نواز نے کہا کہ عدالتیں کیا کررہی ہیں سب کو پتہ چل گیا ہے۔ اپنی والدہ کے حوالے سے ن لیگ کی مرکزی خاتون رہنما نے کہا کہ والدہ کی طبیعت کافی خراب ہے۔ ہماری لندن میں موجودگی ضروری ہے۔ ڈاکٹروں نے میاں صاحب کو لندن بلایا ہے۔

ادھر وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا کہ ن لیگ کی قیادت اور رہنمائوں کو ٹارگٹ کیا جا رہا ہے۔ افسوس ہے کہ مجھ سے پیرا گون کے بارے میں پوچھا جا رہا ہے۔ عدالت میں بیان حلفی کے بعد اب اس کی ضرورت نہیں تھی۔