سال2017 شریف خاندان کیلیے مشکل ترین سال قرار


پاکستان(24نیوز) سال 2017 کا پہلا سورج اپنے ساتھ پانامہ کا ہنگامہ لیکر آیا نواز شریف نا اہل ہوئے ساتھ مقدمات کا نہ ختم ہونے والا سلسلہ بھی شروع ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں شریف خاندان کے خلاف پانامہ سماعت ہوتی رہی  پھر جے آئی ٹی بنی اور رہی سہی کسر بھی خوب نکلی۔ 28 جولائی کے فیصلے کے نتیجے میں نواز شریف نا اہل ہو کر وزارت عظمی سے فارغ ہوگئے۔

احتساب عدالت میں پیشیوں سے پہلے نواز شریف نے عوامی عدالت کا دروازہ بھی کھٹکھٹایا اور اسلام آباد سے جی ٹی روڈ کے راستے لاہور کا سفر کیا۔ بیگم کلثوم نواز این اے 120 کی نشست بچانے میں کامیاب ہوئیں۔

سپریم کورٹ میں حدیبیہ پیپرز ملز کیس دوبارہ کھولنے سے متعلق نیب کی اپیل مسترد ہونے سے شریف خاندان کو کچھ ریلیف ضرور ملا لیکن سانحہ ماڈل ٹاون سے متعلق طاہر القادری اور اپوزیشن جماعتوں کا اتحاد شریف خاندان کے دوسرے سپوت اور مستقبل کے وزیر اعظم شہباز شریف کیلیے خطرے کی گھنٹی بجا رہا ہے۔