فوج کا سینیٹ انتخابات میں کردار نہ جمہوریت کیلئے خطرہ: آصف غفور

فوج کا سینیٹ انتخابات میں کردار نہ جمہوریت کیلئے خطرہ: آصف غفور


اسلام آباد (24 نیوز) ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسز پبلک ریلیشنز میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ بھارت کو ورکنگ باؤنڈری اور لائن آف کنٹرول پر بھر پور جواب دیا جا رہا ہے۔ پاکستان میں دہشت گردوں کا کوئی ٹھکانہ نہیں۔ پاکستان سے افغانستان میں حملوں کے الزامات بے بنیا دہیں۔ حقانیوں کا تعلق بھی افغانستان سے ہے۔ فوج سے جمہوریت کو کوئی خطرہ ہے اور نہ ہی سینیٹ انتخابات میں فوج کا کوئی کردار ہے۔

ترجمان پاک فوج میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ بھارتی فورسز نے متعدد بار لائن آف کنٹرول پر جنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزی کی ہے۔ بھارت نے 2017 میں زیادہ جنگ بندی معاہدہ کی خلاف وزریاں کیں۔ مسئلہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کے لیے جنگ بندی معاہدہ کی خلاف ورزی کی جاتی ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ معاملہ پر بھارتی وزیراعظم اور فوج کا مؤقف الگ الگ ہے۔ بھارتی فورسز کو ایل او سی پر بھرپور جواب دیا جا رہا ہے۔

میجر جنرل آصف غفور نے واضح کیا کہ پاکستان میں دہشتگردوں کا کوئی ٹھکانہ نہیں۔ کابل میں ہوٹل پر حملہ میں ملوث ملزمان افغانستان سے تعلق رکھتے ہیں۔ پاکستان سے افغانستان میں حملوں کے الزامات بے بنیاد ہیں۔ ہم خود دہشتگردی کے خلاف جنگ لڑ رہے ہیں۔

پاک فوج کے ترجمان نے بتایا کہ حقانیوں کا تعلق افغانستان سے ہے۔ ملک میں استحکام بہت ضروری ہے۔ آرمی چیف نے ہمیشہ کہا ہےکہ ملک میں قانون کے حکمرانی چاہتے ہیں۔ آرمی چیف انتخابات کا اعلان نہیں کرتے۔ سینیٹ انتخابات کے لیے فوج کا کوئی کردار نہیں۔ فوج سے جمہوریت کو کوئی خطرہ نہیں۔ چاہتے ہیں ملک میں جمہوریت چلے۔

انھوں نے اضافہ کیا کہ فوج عوام کی ہے۔ عوام کے لیے جو بھی کرنا پڑے گا وہ کریں گے۔ آئینی حدود میں انتخابات سے متعلق جو بھی احکامات ملیں گے عمل کریں گے۔