جو جنگ پاکستان لڑ رہا ہے امریکہ کو خود لڑنا پڑے گی: وزیر اعظم

جو جنگ پاکستان لڑ رہا ہے امریکہ کو خود لڑنا پڑے گی: وزیر اعظم


اسلام آباد(24نیوز)امریکا کی طرف سے پاکستان پر بار باردباو ڈالنے اور امداد بند کرنے کی دھمکیوں کے حوالے سے وزیر اعظم نے کہا ہے امریکا یاد رکھے دہشت گردی کے خلاف جو جنگ پاکستان لڑ رہا ہے امداد بند ہونے کی صورت امریکا کو وہ خود لڑنا پڑے گی ۔
غیر ملکی خبر رساں ادارے سے بات چیت کرتے ہوئے وزیراعظم نے امریکا کو خبردار کیا ہے کہ اگر امداد روکی گئی تو دہشت گردوں سے لڑنے سے متعلق پاکستان کی صلاحیت متاثر ہوگی اور پھر ان دہشت گردوں سے امریکا کو لڑنا پڑے گا،انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ جن خیراتی اداروں پر امریکا نے پابندی لگائی ہے ان کا کنٹرول حکومت سنبھال لے گی
وزیراعظم کا اسلام آباد میں غیر ملکی خبر رساں اداریکو انٹرویو میں کہنا تھا کہ دورہ امریکا میں انہوں نے صدر ٹرمپ کو گرم جوش پایا،،، وہ ایک ایسے شخص ہیں جن سے بات چیت کی جاسکتی ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ صدرٹرمپ کے ٹوئٹ کا کوئی رسمی مطلب نہیں تاہم جس لہجہ میں بات کی گئی وہ ناقابل قبول ہے، پاکستان نے انسداد دہشت گردی کے لیے امریکی لاجسٹکس کو آزادانہ نقل وحمل کی اجازت دی،، اگر پابندیاں لگائی جاتی ہیں، اتحادی معاونت فنڈکی ادائیگی نہیں کی جاتی تو اس سے دہشت گردی کے خلاف لڑنے کی ہماری صلاحیت کمزور ہوگی۔
انہوں نے مزید کہا کہ امریکا کو یہ تسلیم کرنا چاہیے اور جن دہشتگردوں سے ہم نہیں لڑیں گے، ان سیامریکا کو لڑنا پڑے گا۔
واضح رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امریکہ کی طرف سے پاکستان کو دی جانیوالی امداد کو بے وقوفی قرار دیتے ہوئے بند کررکھا ہے، پاکستان نے بھی اس کا منہ توڑ جواب دیتے ہوئے ٹھکرادیا ہے۔