فاٹا اصلاحات کا بل آج اسمبلی میں پیش کیا جائے گا

06:05 PM, 23 مئی, 2018

رانا جبران

 فاٹا (24 نیوز) وفاقی کابینہ نے فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کیلئے آئینی ترمیم کا مسودہ پارلیمنٹ پیش کرنے کی منظوری دے دی، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت پارلیمانی رہنماوں کے اجلاس میں فاٹا اصلاحات کےلئے آئینی ترمیمی مسودے پر پارلیمانی رہنمائوں نے اتفاق کرلیا ہے۔

پڑھنا مت بھولئے: نواز شریف نے قوم کو بتادیا، انہیں کیوں اور کس نے نکالا: مریم نواز

 24 نیوز ذرائع کے مطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت پارلیمانی رہنماوں کے اجلاس میں فاٹا اصلاحات کےلئے آئینی ترمیمی مسودے پر پارلیمانی رہنمائوں نے اتفاق کرلیا ہے۔ بیرسٹر ظفر اللہ کا کہنا ہے کہ حکومت نے اپوزیشن کی فاٹا اصلاحات بل سے متعلق تجاویز مان کر مسودے میں شامل کردیں ہیں۔

اس سے قبل اراکین پارلیمنٹ کا کہنا تھا کہ فاٹا کو کے پی کے میں ضم کر کے فاٹا کی عوام کو حقوق ملنے چاہیں۔  ہمیں امید ہے کہ بل کل آئے گا اور پاس ہو جائے گا ،پہلے ہی بل بہت لیٹ یو گیا ہے اور مزید لیٹ نہیں ہونا چائیے۔

یہ خبر بھی پڑھیں: ن لیگی رہنما دانیال عزیز نے تھپڑ کا جواب دیدیا

فاٹا انٹیرم گورننس ریگولیشن 2018کو کل قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔ جس کی منظوری کے بعد پاکستان کے تمام قوانین فاٹا پر لاگو ہوں گے۔ جبکہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے اختیارت بھی فاٹا پر نافذ ہوں گے۔سالانہ ایک ارب روپے دس سال تک فاٹا کو این ایف سی ایوارڈ کی مد میں اضافی ملیں گے جو صرف فاٹا کی ترقی کے لیے استعمال ہوں گے۔

 واضح رہے کہ جے یو آئی ف اورپختونخواہ ملی عوامی پارٹی کے شریک ارکان نےمجوزہ ترمیم پر احتجاج کرتے ہوئے واک آؤٹ کردیا۔

مزید اس ویڈیو میں:

مزیدخبریں