وزیراعظم کی زیر صدارت مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس 24 نومبر کو طلب

وزیراعظم کی زیر صدارت مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس 24 نومبر کو طلب


 اسلام آباد(24نیوز): وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس کل طلب کرلیا ۔ اجلاس میں ایل این جی کی درآمد اور صوبوں کو تیل و گیس کے حقوق دینے کا جائزہ لیا جائے گا۔ اجلاس میں قومی واٹر پالیسی بھی پیش کی جائے گی۔ ٹونئٹی فور نیوز نے مشترکہ مفادات کونسل کے ایجنڈے کی کاپی حاصل کرلی ہے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس 24 نومبر کو پشاور میں ہوگا ۔ ٹونئٹی فور نیوز نے مشترکہ مفادات کونسل کے ایجنڈے کی کاپی حاصل کرلی ہے۔ ایجنڈے کے مطابق اجلاس میں ایل این جی کی درآمد کی سمری پیش کی جائے گی جب کہ صوبوں کو تیل و گیس کے حقوق دینے کا جائزہ لیا جائے گا ۔ فسکل کوآرڈی نیشنل کمیٹی کے قیام کی سمری بھی مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں پیش کی جائے گی ۔

اجلاس میں اٹھارویں ترمیم کے بعد ای او بی آئی کے معاملات کا جائزہ لیا جائے گا۔ پیٹرولیم پالیسی 2012 پر عمل درآمد اور وفاق اور صوبوں کو پیٹرولیم ایکسپلوریشن کے لیے نیلامی میں حصہ لینے کی اجازت دینے کی سمری بھی اجلاس میں پیش کی جائے گی ۔ اجلاس میں پیش کی جائے گی قومی واٹر پالیسی مشترکہ مفادات کونسل کے اجلاس میں پیش کی جائے گی. سی سی آئی اجلاس میں صوبوں کو تیل و گیس کے پیداواری ڈیٹا تک رسائی دینے کی سمریز بھی پیش کی جائیں گی جب کہ بین الصوبائی رابطہ کمیٹی کی سفارشات پیش کی جائیں گی ۔