چیف جسٹس کے تنخواہ نہ لینے کے اعلان کی وجہ سامنے آ گئی


اسلام آباد( 24نیوز ) چیف جسٹس تیزی سے مقدمات کی سماعت کے ساتھ ازخود نوٹسز بھی لے رہے ہیں لیکن انہوں نے تنخواہ لینے سے انکار کردیا۔
سپریم کورٹ میں پاکستان پبلک ورکس ڈپارٹمنٹ (پی ڈبلیو ڈی) ملازمین کو تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے کیس کی سماعت ہوئی۔ کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے اپنی تنخواہ لینے سے بھی انکار کر دیا۔

یہ بھی پڑھیں:چیف جسٹس کا نابینا وکیل کی اپیل کا نوٹس،لاہور ہائیکورٹ کو دوبارہ انٹرویو لینے کا حکم

چیف جسٹس نے کہا کہ جب تک باقی سرکاری ملازمین کو تنخوا ہ نہیں ملے گی مجھے بھی تنخواہ نہ دی جائے، یہ عام ہو چکا ہے کہ سرکاری ملازمین کو یکم کو تنخواہ نہیں ملتی۔ چیف جسٹس نے حکم دیا کہ ریاست کے تمام ملازمین کو تنخواہ کی ادائیگی تک چیف جسٹس کو تنخواہ نہ دی جائے، میرا چیک میرے اکاو¿نٹ میں نہیں جائے گا، ملازمین کو ادائیگی کی تصدیق کے بعد میرا چیک میرے سٹاف کو دیں۔