سندھ میں بھی نگران سیٹ اپ کا معاملہ لٹک گیا

سندھ میں بھی نگران سیٹ اپ کا معاملہ لٹک گیا


کراچی ( 24نیوز ) سندھ میں نگراں سرکار کی تشکیل کا معاملہ لٹکتا نظرآرہا ہے،ایم کیو ایم پاکستان کے اختلافات مشاورتی عمل میں رکاوٹ بن گئے،وزیرِ اعلیٰ سندھ اور اپوزیشن لیڈر کے مابین ملاقات بھی نہ ہوسکی،،پیپلز پارٹی کے رہنما منظور وسان نے بھی نگران وزیرِ اعلیٰ کے نام کی پیشگوئی کردی ہے۔

سندھ میں نگران سرکار کی تشکیل کا معاملہ کھٹائی میں پڑگیا،،ایم کیوایم پاکستان کے دونوں گروہوں کے اختلافات مشاورتی عمل میں رکاوٹ بن گئے،،قائد حزب اقتدار اور حزب اختلاف کے درمیان ملاقات نہ ہوسکی،،،پیپلز پارٹی نے نگراں وزیر اعلی کے نام پر مشاورت مکمل کرلی،،شکارپور سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر یونس سومرو کا نام سر فہرست ہے

،،صوبائی وزیر منظور وسان نے بھی پیشگوئی کرتے ہوئے کہا کہ ، سندھ کا نگران وزیر اعلی ڈاکٹر ہوگا ۔

یہ خبر بھی پڑھیں:  ایون فیلڈ ریفرنس:میرا بھی وہی موقف ہے جو نواز شریف کا تھا:مریم نواز

نگران سیٹ اپ کیلئے اپوزیشن کا مشاورتی اجلاس تاحال نہ ہوسکا،،فنکشنل لیگ کا تجویز کردہ سید غوث علی شاہ کے نام کو نوازلیگ اورپی ٹی آئی نے مسترد کردیا،،28 مئی کو سندھ اسمبلی کی مدت ختم ہورہی ہے، جس کے تحت اپوزیشن اورحکومت کو جمعے تک مشاورت کرکے نام گورنر سندھ کو ارسال کرنے ہیں، اب دیکھنا یہ ہے کہ نگران وزیر اعلیٰ کون بنے گا،فیصلہ جلد ہوجائے گا۔