صاحبہ کہنے پر بلاول بھٹو کا عمران خان کو کرارا جواب



اسلام آباد(24نیوز)صاحبہ کہنے پر بلاول بھٹو  نے وزیر اعظم  عمران خان کو کرارا جواب دے دیا۔

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ  یہاں ایک عجیب نظام ہے، پاکستان پیپلز پارٹی نے ہمیشہ عوام کے لیے کام کیا ہے، ن لیگ نے صرف 2 اعشاریہ 8 ملین نوکریاں دیں ہم نےتو 1 سو پچاس فیصد تنخواہیں بڑھائیں، غریب کسان مزدور کو خوش رکھنے میں حکومت ناکام ہے ،ایک حد تک ہی عوام آپکا ظلم برداشت کر رہی ہے، عوام کی جیب میں کچھ نہیں ہے آپکے امیر کے لیے ایمنسٹی لائی جارہی ہے، آپ کہتے تھے آئی ایم ایف سے ڈیل سے پہلے قرضے سے پہلے خودکشی کر لونگا۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر بجلی کو مہنگا کر رہے تو کیوں ایمنسٹی سکیم کی بات کررہے ہو ،یہ لوگ غریب کا حق مارتے ہیں،سبسڈیز کو ختم کریں گے کہ امیر کو فائدہ پہنچادیں،خان صاحب غریب کی بات کرتے ہیں حکومت غریب کو مار رہی ہے۔

 موجودہ جمہوری عمل پر بات کرنا چاہتا ہوں، معاشی صورتحال آپ کو معلوم ہے عوام مہنگائی کے سونامی میں ڈوبے ہوئے ہیں ،مہنگائی اس قدر بڑھ گئی ہے کہ ہر آدمی کے لیے زندگی تنگ ہوتی جا رہی ہے، اگر آپ غریب ہیں بیمار ہیں تو صحت کا شعبہ کہتا ہے اپ مر جائیں حکمران کہتے ہیں مہنگائی اتنی ہے ہی نہیں، غربت تو ہمیشہ سے مسئلہ رہا ہے اپ اس پر بات ہی نہیں کرتے کہ آپ کتنا ظلم کر رہے ہیں عوام پر اگر آپ اس ملک کے کسان کو بدحال کر رہے ہیں، مزدور کا معاشی قتل کر رہے ہیں تو آپ کو یہ قرضہ مل رہا ہے ایمنسٹی تو بڑے بڑے امیر لوگوں کو ملتی ہے یہ آپکا غریب کا حق مار رہے ہیں سبسڈی ختم کریں گے۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ میرے حوالے سے بیان دے کر وزیر اعظم نے اپنا قد چھوٹا کیا،مرد کو عورت کہنے سے مرد کو تو کوئی فرق نہیں پڑتا،عورت ہونا کیا گالی ہے،اس کا عورتوں پر کیا اثر پڑے گا،وزیر اعظم کو سوچنا چاہئے،ہم ملک کی عورتوں پر فخر کرتے ہیں انہوؒ ں نے ملک کی ترقی کیلئے کام کیا،اگر خان صاحب  سمجھتی ہے کہ اس طرح بیان دے کر وہ کسی کی انسلٹ کررہے تو غلط ہے وہ اپنے عہدے کی عزت کریں،اگرآپ نے بات نہیں کرنی تو نہ کریں۔

وزیر اعظم کی سلپ آف ٹنگ ’’ سپیڈ آف لائٹ ‘‘سے ہے،انہوں پریس کے سامنے شاہ محمود سے ہاتھ جوڑ کر کہا کہ آپ اپنے وزیر اعظم کو اکیلا مت چھوڑا کریں،یہ جاپان اور جرمنی کو ملادیتے ہیں۔

ایک سوال کے جواب میں چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ ’اگر ون یونٹ یا صدارتی نظام نافذ کرنے کی کوشش کی گئی تو خبردار کرتا ہوں ملک ٹوٹے گا‘۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer