13 بچوں میں جان لیوا مرض کی تشخیص

13 بچوں میں جان لیوا مرض کی تشخیص


 لاڑکانہ ( 24 نیوز ) گزشتہ 2 ہفتوں میں ایڈز سے متاثرہ 5 بچے جاں بحق، بچوں کا تعلق رتو ڈیرو اور گردو نواح سے ہے، مرنے والوں میں عزادار، رازق، جویریہ، غلام نبی اور طاہر شامل ہیں۔

تفصیلات کے مطابق لاڑکانہ گزشتہ دو ہفتوں میں ایڈز سے متاثرہ 5 بچے جاں بحق ہو چکے ہیں۔ پانچوں بچوں کا تعلق تحصیل رتو ڈیرو شہر اور گردو نواح کے دیہی علاقوں سے ہے۔ جاں بحق ہونے والوں کی عمریں 6 ماہ سے 3 سال تک ہیں۔ ایڈز متاثرہ بچوں میں 6 ماہ کا عزادار حسین، 6 ماہ کا رازق کھوکھر، ڈیڈھ سال کی جویریا، 3 سال کا غلام نبی اور طاہر بزدار شامل ہیں۔

ڈاکٹروں کے مطابق آج ایڈز کے مزید دو کیس پازیٹیو سامنے آئے ہیں۔ رتو ڈیرو میں ایک ماہ میں 13 بچوں میں ایڈز وائرس پازیٹیو ہونے کی تصدیق ہو گئی ہے۔

انچارج پیتھالوجسٹ پی پی ایچ آئی ڈاکٹر عبدالحفیظ کے مطابق رواں ماہ 16 بچوں کے سیمپل ایچ آئی وی ایڈز کی تشخیص کے لئے پی پی ایچ آئی لیبارٹری بھیجے گئے ہیں۔ ڈاکٹر عبدالحفیظ کا کہنا ہے کہ بچوں میں مسلسل بخار و دیگر علامات کی بنیاد پر ڈاکٹر عمران نے والدین کو بچوں کے ایچ آئی وی ٹیسٹ کے لئے کہا۔ جن بچوں میں ایڈز کا وائرس پازیٹیو آیا ہے ان کی عمریں 4 ماہ سے 8 سال تک کی ہیں۔

ڈاکٹر کا کہنا رتو ڈیرو میں ماس اسکریننگ کی ضرورت ہے۔ ماس اسکریننگ سے مرض کے مبتلا مریضوں کی تعداد معلوم ہو سکے گی۔ لاڑکانہ رتو ڈیرو میں سندھ ایڈز کنٹرول پروگرام اور محکمہ صحت کو ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ متاثرہ بچوں کے والدین کے بلڈ سیمپلز بھی لیے جارہے ہیں۔