2018ءتبدیلی کا سال ثابت ہوا

2018ءتبدیلی کا سال ثابت ہوا


اسلام آباد( 24نیوز ) 2018 حقیقت میں تبدیلی کا سال رونما ثابت ہوا، پاکستان کی سیاست کو تبدیل کرکے رکھ دیا،صدر ،وزیراعظم ،سپیکر قومی اسمبلی اور چیئرمین سینیٹ ،تین صوبوں کے وزراءاعلیٰ،چاروں گورنرز سبھی تبدیل ہوگئے۔

2018 میں پارلیمانی،صدارتی اور سینیٹ کے انتخابات ہوئے،ان انتخابات کی بدولت تحریک انصاف کے پاس پہلی بار وفاق اور پنجاب کا اقتدار ہاتھ آیا،تو عمران خان کا بائیس سال بعد وزیراعظم بننے کا خواب بھی پورا ہوا،صدارتی انتخاب کی صورت میں تحریک انصاف کے عارف علوی صدر مملکت بنے، سینیٹ انتخابات میں تحریک انصاف اور پیپلزپارٹی کی حمایت سے صادق سنجرانی چیئرمین سینیٹ بنے۔

اسی طرح سندھ میں عام انتخابات کے بعد سندھ میں پیپلزپارٹی اور خیبرپختونخواہ میں تحریک انصاف نے اپنی حکومت برقرار رکھی تو بلوچستان عوامی پارٹی نے بلوچستان میں اپنی حکومت بنائی،چاروں صوبوں میں گورنرز بھی عام انتخابات کے باعث تبدیل ہوئے تو ق لیگ نے بھی دوبارہ حکومت میں کم بیک کیا،عام انتخابات 2018 بھی ماضی کے انتخابات سے مختلف ثابت نہ ہوئے،البتہ بہتری ضرور نظر آئی ،تاہم ماضی کے انتخابات کی طرح دھاندلی کا شور اس بار بھی بلند ہوا،البتہ جوڈیشل انکوائری کمیشن کی بجائے اس بار دھاندلی کی تحقیقات کے لیے پارلیمانی کمیٹی تشکیل دی گئی۔

عام انتخابات 2013 کو آر او الیکشن قرار دیا گیا تو ان انتخابات آر ٹی ایس وجہ تنازع بنی، 2018 اس وجہ سے بھی منفرد ثابت ہوا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بار سمندرپارپاکستانیوں کو ضمنی انتخابات میں بیرون ملک ووٹ ڈالنے کی سہولت فراہم کی گئی تاہم سمندرپارپاکستانیوں نے سردمہری دکھائی اور صرف 1 فیصد ووٹرز نے ووٹوں کی رجسٹریشن کرائیں۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer