لاتعداد ادبی ایوارڈ یافتہ مٹھل جھتیال کوجگر کا عارضہ لاحق

لاتعداد ادبی ایوارڈ یافتہ مٹھل جھتیال کوجگر کا عارضہ لاحق


لاڑکانہ(24نیوز) لاتعداد  ادبی  ایوارڈ   یافتہ سندھی لوک ادب کے شہنشاہ مٹھل جھتیال جگر کے عارضہ میں مبتلا،غربت کی وجہ سے علاج کرانےکے قابل بھی نہیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کی لوک ادبی تاریخ میں جلال کھٹی اور محمد ملوک عباسی کے بعد اگر نام لیا جائے تو مٹھل جھتیال کا ہی نام آتا ہے۔ مٹھل جھتیال نے شاہ عبداللطیف بھٹائی، قلندرلعل شہباز، سچل سرمست کے عرسوں کی ادبی کانفرنسوں میں لاتعداد ادبی ایوارڈ حاصل کئے مگر آج جگر کی بیماری میں مبتلا ہوکر بسترتک محدود ہوکر رہ گئے ہیں۔لوک ادب کی محفلوں کو چار چاند لگانے والے مٹھل جھتیال آج غربت اور مفلسی کی وجہ سے اپنی بیماری کا علاج تک کرانے کے لئے محتاج ہوگئے ہیں۔

واضح رہے کہ فنکار برادری نےحکومت اور محکمہ ثقافت سے مطالبہ کیا ہے کہ سندھی لوک ادب کے شہنشاہ کا سرکاری خرچے پر علاج کرایا جائے تاکہ وہ لوک ادب کی محفلوں میں دوبارہ رونقیں پیدا کرسکیں۔