کرسی ایک،امیدوار سولہ،بلوچستان کے نگران وزیر اعلیٰ کا تقرر مسئلہ بن گیا

کرسی ایک،امیدوار سولہ،بلوچستان کے نگران وزیر اعلیٰ کا تقرر مسئلہ بن گیا


کوئٹہ( 24نیوز )بلوچستان میں نگران وزیر اعلیٰ کیلئے حکومت اور اپوزیشن نے سولہ نام تجویز کر دئیے، نگران وزیر اعلیٰ کیلئے دئیے گئے ناموں پر غور کیلئے آج اہم بیٹھک ہوگی، وزیر اعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو کا کہنا ہے کہ اڑتالیس گھنٹوں میں نگران وزیر اعلیٰ کا نام فائنل کر لیا جائے گا۔
بلوچستان مین نگران وزیر اعلیٰ کے انتخاب کیلئے وزیر اعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو اور اپوزیشن لیڈر عبدالرحیم زیارتوال کے درمیان پہلی نشست گزشتہ شب ہو ئی جس میں حکومت اور اپوزیشن نےآٹھ آٹھ نام دے دئے۔

یہ بھی پڑھیں:  مریم نواز کا جے آئی ٹی ،ریڈلے رپورٹ ماننے سے انکار

حکومت کی جانب سے پرنس احمد علی، علاوالدین مری، نوابزادہ سیف مگسی، حسین بخش بنگلزئی، کامران مرتضی اور داد خان اچکزئی کے نام پیش کئے گئے جبکہ اپوزیشن نے قاضی اشرف،اسلم بھوتانی،ڈاکٹر مالک کاسی، فتح خان خجک، علی احمد کرد، منور مندوخیل اور نواب غوث بخش باروزئی کے نام شامل ہیں وزیراعلی بلوچستان کا کہنا ہے کہ 48 گھنٹوں کے اندر نگران وزیراعلی کے نام پر اتفاق کرلیا جائے گا۔مشاورتی اجلاس کا دوسرا دور آج شام پھر ہوگا جس پر حکومت اور اپوزیشن تجویز کردہ ناموں پر غور کرے گی۔