وفاقی حکومت کے تمام ملازمین کو تین ماہ کی بونس تنخواہ دینے کا اعلان

وفاقی حکومت کے تمام ملازمین کو تین ماہ کی بونس تنخواہ دینے کا اعلان


اسلام آباد (24 نیوز) چند روز کی مہمان حکومت نے جاتے جاتے انوکھا اعلان کر دیا۔ وفاقی حکومت نے تمام ملازمین کو تین ماہ کی تنخواہ بونس میں دینے کا اعلان کردیا۔ سیاسی رہنماؤں نے اسے قبل از انتخاب دھاندلی قرار دے دیا۔

24 نیوز کے مطابق سیاسی محاذ پر پے در پے شکستوں سے نڈھال وفاقی حکومت نے حاتم طائی کی قبر پر لات مارنے کا فیصلہ کر لیا۔ حکومت پانچ سال میں عوام سے کیے گئے وعدے پورے نہ کرسکی۔ اس لیے وفاقی ملازمین کو سیاسی رشوت دینے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

یہ بھی پڑھیں: عید الفطر پر نئے نوٹوں کے حصول کیلئے اسٹیٹ بنک نے آسان طریقہ متعارف  کروادیا 

وفاقی حکومت نے جاتے جاتے اعلان کیا ہے کہ تمام وفاقی ملازمین کو تین ماہ کی بنیادی تنخواہ بطور بونس دی جائے گی۔ وزیراعظم نے بطور چیئرمین اقتصادی رابطہ کمیٹی یہ اعلان کیا۔ یہ بھی کہا گیا کہ آئندہ حکومت بھی اس پرعمل جاری رکھنے کے لیے پالیسی وضح کرے۔

سیاسی رہنماؤں اورمعاشی ماہرین کا کہنا ہے کہ حکومت اپنے اخراجات پورے کرنے کے لیے قرضے لے کر اورنوٹ چھاپ کر کام چلا رہی ہے۔ ایسی صورت حال میں اس اعلان کو قبل از انتخاب دھاندلی کے سوا کچھ نہیں کہا جا سکتا۔

پڑھنا نہ بھولیں: فاٹا کے خیبرپختونخوا میں انضمام کا بل سینیٹ سے بھی منظور 

حکومت نے حلوائی کی دکان پر دادا جی کی فاتحہ پڑھ دی ہے۔ اس اعلان سے صاف پتہ چلتا ہے کہ حکومت کو معیشت اور قوم کی فکر سے زیادہ صرف اور صرف آئندہ الیکشن کی فکر ہی کھائے جا رہی ہے۔