لاہوری کھانوں اور سیرسپاٹے کی خاطر بہت بڑا رسک لیا تھا: گنگولی


نیو دہلی (24 نیوز) بھارت کے سابق کپتان گنگولی نے بتایا کہ انہوں نے لاہوری کھانوں اور سیرسپاٹے کی خاطر بہت بڑا رسک لیا تھا۔ وہ چپ چاپ ہوٹل سے نکلے اور گھوم گھوماتے واپس آگئے۔ اس وقت کے صدر پرویز مشرف نے انہیں فون کرکے ہلکی سی ڈانٹ بھی پلائی۔

بھارت کے سابق کپتان سارو گنگولی نے اپنی کتاب "اے سنچری از ناٹ انف" میں ایک مہم جوئی کا انکشاف کیا ہے، لکھتے ہیں کہ 2004 میں دورہ پاکستان کے دوران وہ لاہور پی سی ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے تھے۔ انھوں نے لاہوری کھانوں اور تاریخی مقامات کے بڑے قصے سن رکھے تھے۔ ان کا جی للچایا تو کسی کو بتائے بغیر ہوٹل سے چپ چاپ گوالمنڈی کے لئے نکل پڑے۔

انہوں نے اپنی کتاب میں لکھا کہ وہ لاہور کی سیر کرتے رہے، پھر اچانک ایک لڑکے نے پہچان لیا تو فوری ہوٹل میں وآپس آگئے۔ لکھتے ہیں کہ ان کی اس حرکت پر اس وقت کے صدر پرویز مشرف نے انہیں فون کال کی اور کہا کہ آئندہ ایسا کرنے سے احتیاط کریں۔ اگر باہر جانا ہے تو بتا دیں تاکہ آپ کے ساتھ سیکیورٹی وفد ہو۔