دنیا بھرمیں کشمیری بھارتی یوم جمہوریہ کو بطور یوم سیاہ منا رہے ہیں

دنیا بھرمیں کشمیری بھارتی یوم جمہوریہ کو بطور یوم سیاہ منا رہے ہیں


مظفر آباد(24نیوز)مقبوضہ اورآزاد کشمیرسمیت دنیا بھرمیں کشمیری بھارت کا یوم جمہوریہ آج یوم سیاہ کے طورپرمنا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق 26 جنوری انیس سو پچاس میں بھارتی پارلیمنٹ نے برطانوی سے آزاد ی کے بعد آیئن ہند کو حتمی شکل دے دی۔ یوں ہندوستان دنیا کے نقشے پر پہلی مرتبہ جمہوری ملک کے طور ہر ابھرا اس دن کوبھارت میں سرکاری سطح پر پورے جوش خروش سے یوم جمہوریہ کے طور پر منایا جاتاہے جبکہ مقبوضہ جموں و کشمیر اور پوری دنیا میں بسنے والے کشمیری اسے یوم سیاہ کے طور پر مناتے ہیں۔

بھارت ایک طرف تو جمہوریت کا دعویٰ کرتا ہے لیکن دوسری جانب وہ کشمیریوں کو ان کا بینادی حق یعنی حق خود ارادیت دینے سے مسلسل انکار کرتا آرہا ہے۔ بھارتی جمہوریت کے پیروکاروں نے ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں کو صرف اس لئی شہید کیا کہ وہ اپنے سیاسی مستقبل کا فیصلہ خود کرنا چاہتے ہیں۔

مبصرین کا کہنا ہے نء دہلی کے حکمران مقبوضہ کشمیر کے لوگوں پر ظلم و ستم جاری رکھنے کے ساتھ ساتھ ان کی آزادی سلب کر کے 26 جنوری کو یوم جمہوریہ منا کردراصل جمہوریت کے ساتھ مذاق کرتے ہیں۔

برسلز کی یادگار اٹومیم سے ایکسپو سنٹر تک ریلی نکالی گئی،،، جس میں مقبوضہ آسام، تری پورہ، ناگا لینڈ اور سکم اور منی پور کے باسی بھی شریک ہوئے۔ مظاہرین نے بھارتی مظالم کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

لندن میں بھی کشمیری اورسکھ کمیونٹی نے لندن ٹرانسپورٹ نیٹ ورک پر فری کشمیر اورخالصتان زندہ باد مہم کاآغازکردیاگیاہے۔مختلف گاڑیوں پر لگائے گئے سائن بورڈز میں واضح کیاگیا ہے کہ مقبوضہ کشمیرپربھارتی فوج غیرقانونی طورپرقابض ہے۔ فری کشمیر اور خالصتان زندہ باد مہم ایک ماہ تک لندن میں چلائی جائے گی،،، جس کے بعد اس کا دائرہ برمنگھم،بریڈفورڈ،گلاسگو اور مانچسٹرتک پھیلایاجائےگا۔