حکومت سماجی رابطے کی ویب سائٹس بلاک کردے : پی ٹی اے

حکومت سماجی رابطے کی ویب سائٹس بلاک کردے : پی ٹی اے


اسلام آباد( 24نیوز ) پی ٹی اے نےحکومت کو پالیسی بناکر سماجی رابطے کی ویب سائٹس بلاک کرنے کی تجویز دے دی، بچوں کی پورنوگرافی میں پاکستان کے نمبر ون ہونےکی غلط فہمیاں ہیں۔

تفصیلات کےمطابق پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی کے چیئرمین عظیم باجوہ نے حکومت کو پالیسی بناکر سماجی رابطے کی ویب سائٹس بلاک کرنے کی تجویز دے دی،چیئرمین پی ٹی اے   کا کہنا تھا کہ بچوں کی پورنوگرافی میں پاکستان کے نمبر ون ہونےکی غلط فہمیاں ہیں، سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کو بریفنگ دیتے ہوئے چیئرمین پی ٹی اے نےکہا کہ سوشل میڈیا پر گستاخانہ مواد بہت بڑا مسئلہ ہے۔

سوشل میڈیا پر جعلی ناموں سے بھی اکاؤنٹ چلائے جارہے ہیں، زیادہ ویب سائٹس بیرون ممالک سے آپریٹ ہورہی ہیں، حکومت پالیسی بناکر چین اور یو اے ای کی طرح سماجی رابطے کی ویب سائٹ کو بلاک کردے، حکومت پالیسی بنائے اور مقامی سطح پر متبادل سماجی رابطوں کی ویب سائٹ بنائی جائیں، 2015 میں ایک بین الاقوامی اخبار نے غلط اعداد و شمار پر رپورٹ کیا کہ پاکستان بچوں کی پورنوگرافی میں نمبر ون ہے، پورنوگرافی سےمتعلق ساڑھے 8 لاکھ ویب سائٹس بلاک کی ہیں۔

چیئرمین  پی ٹی اے نےمزید بتایا کہ گستاخانہ مواد سےمتعلق ہمیں عوام کی ساڑھے 8 ہزار شکایات موصول ہوئیں، گستاخانہ مواد کی 40 ہزار ویب سائٹس بلاک کیں،ڈارک ویب پاکستان میں موجود ہے لیکن اس کو کنٹرول کرنا آسان نہیں۔