ارکان اسمبلی کے ایک دوسرے پر تنقید کا نشتر

ارکان اسمبلی کے ایک دوسرے پر تنقید کا نشتر


اسلام آباد(24 نیوز) قومی اسمبلی میں ارکان نے ایک دوسرے کو بھرپور تنقید کا نشانہ بنایا، فیصل وواڈانے شہبازشریف کوچیلنج کیا توسعد رفیق نے مزیدکیس دائرنہ ہونے پر شکوہ کرڈالا۔

فیصل وواڈا نے ایک بار پھر نوکریاں والے دعوے کا ذکر کیا اور کہا کہ تکہ بوٹی کرنے کا کہا تھا کھانے کا نہیں ۔ انہوں نے شہباز شریف کو ووٹوں کی گنتی پر چیلنج بھی کیا، خواجہ سعد رفیق نے حکومت سے سوال کیا کہ آپ کے پلے کیا ہے،  منتخب سیاسی وزیر اعظم کے پاس این آر او کا اختیار نہیں ہوتا، خواجہ آصف نے فواد چودھری کو طعنہ دیا کہ ، رل تو گیا لیکن چس بھی نہیں آئی۔

وزیرسائنس وٹیکنالوجی فوادچودھری نے قومی اسمبلی میں ن لیگ کونشانے پررکھ لیا، فوادچودھری کہتے ہیں کہ ن لیگ کو سمجھ نہیں آرہی وہ ن لیگ ہے،م لیگ یا ش لیگ ؟ جبکہ وزیراعظم نےسوشل میڈیا پر چلنےوالی ڈیل کی خبروں کومسترد کرتے ہوئے کہاہے کہ قانون سےباہر کوئی نہیں۔

انہوں نے کہا کہ اللہ کرے اگلے سال معیشت بہتر ہو تو ہم بھی چائے ملا سکیں، ابھی تو دوسروں کے چیمبر میں جا کر چائے پینی پڑتی ہے۔