براعظم آسٹریلیا کی کھوج لگانے والے شخص کی باقیات 200 سال بعد دریافت

براعظم آسٹریلیا کی کھوج لگانے والے شخص کی باقیات 200 سال بعد دریافت


لندن (24 نیوز ) براعظم آسٹریلیا کی کھوج لگانے والے نامور برطانوی ایکسپلورر کیپٹن میتھیو فلنڈر کی باقیات 200 سال بعد لندن سے مل گئیں۔

تفصیلات کے مطابق لندن کو برمنگھم سے ملانے کے لیے ڈالی جانے والی ریلوے لائن کی کھدائی کے دوران 40 ہزار قبریں دریافت ہوئیں جس میں سے ایک فلنڈر کی تھی،  جنہوں نے 200 سال قبل براعظم آسٹریلیا کھوج لگائی تھی، 1814 میں گردے کے انفیکشن کے سبب 40 سال کی عمر میں وفات پانے والے فلنڈر کی باقیات کی شناخت ان کے تابوت پر سیسے سے بنی پلیٹ سے کی گئی۔

برطانیہ میں آسٹریلین ہائی کمشنر جارج برینڈس نے کہا کہ یہ آسٹریلیا کے لیے ایک انتہائی پرجوش لمحہ ہے اور یہ ایک ایسے موقع پر ملی ہے جب ہم آسٹریلیا کا قومی دن منانے والے ہیں، آسٹریلیا کا سراغ لگانے والے اس شخص کے کارناموں کو ان کے وقت میں زیادہ پذیرائی نہیں ملی لیکن آج انہیں آسٹریلیا میں قومی ہیرو کا درجہ حاصل ہے، جہاں ان کے نام سے ایک یونیورسٹی منسوب ہے جبکہ ریاست وکٹوریہ میں ایک علاقے کو بھی ان کا نام دیا گیا ہے۔

یاد رہے انہیں برطانیہ کے مصروف ترین ریلوے اسٹیشن کے نیچے دفن کیا گیا تھا اور اب ان کی لاش کی باقیات کو کہیں اور دفن کیا جائے گا، البتہ ابھی اس مقام کا اعلان نہیں کیا گیا۔

Malik Sultan Awan

Content Writer