حکومت نے عوام کی جیبیں خالی کرنے کا پروگرام بنا لیا

حکومت نے عوام کی جیبیں خالی کرنے کا پروگرام بنا لیا


اسلام آباد(24نیوز) شرح سود میں اضافے کا امکان،حکومت کو بینکوں سے ضرورت کے مطابق نیا قرض نا مل سکا، 350 ارب روپے کی ضرورت تھی، لیکن1 ارب روپے سے بھی کم رقم ملی۔

تفصیلات کے مطابق حکومت نے پرانے قرضے واپس کرنے کے لیے بینکنگ سیکٹر سے نیا قرض لینے کے لیے ٹرثری بلز کی نیلامی کی، اسٹیٹ بینک کے مطابق اس نیلامی سے 350 ارب روپے کے حصول کا ہدف رکھا گیا تھا، لیکن بینکوں کی طرف سے صرف3 ماہ کی مدت کے لیے 1 ارب25 کروڑ روپے کے بلز خریدنے کی ہی پیشکش کی، 6 ماہ اور 12 ماہ کی مدت کے لیے قرض دینے کے سلسلے میں کسی بینک یا مالیاتی ادارے نے کوئی پیشکش ہی نہیں کی، حکومت نے7 اعشاریہ 75فیصد شرح سود پر 75 کروڑ روپے مالیت کے بلز فروخت کیے۔

رواں ہفتے کے دوران حکومت نے 361 ارب 5 کروڑ 40 لاکھ روپے کے اندرونی قرضے واپس کرنے ہیں،اسٹیٹ بینک نئی مانیٹری پالیسی کا اعلان ہفتے کے روز کررہا ہے۔