دہشت گردی کے خاتمہ کا دعویٰ مٹی کا ڈھیر ثابت، کوئٹہ میں ایک اور دھماکہ


کوئٹہ (24 نیوز) صوبائی دارالحکومت میں ایف سی اور لیویز کے کیمپ پر خودکش دھماکہ، 4 اہلکار شہید اور 8زخمی۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے نواحی علاقہ نوحصار میں خود کش حملہ کے نتیجہ میں 4 ایف سی اہلکار شہید اور 8 زخمی ہو گئے۔ خود کش حملہ کوئٹہ کے نواحی علاقہ نوحصار میں ایف سی اور لیویز کے کیمپ پر کیا گیا۔دھماکہ کے بعد لیویز اور ایف سی اہلکاروں نے علاقہ کا محاصرہ کر کے شواہد اکٹھے کرنا شروع کر دیئے ہیں۔

وزیرداخلہ احسن اقبال نے کوئٹہ دھماکہ کی شدید الطاظ میں مذمت کرتے ہوئے شہداء کے درجات کی بلندی اورزخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کی۔ ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں کی کمرتوڑی جا چکی ہے۔ شکست خوردہ دہشت گرد بزدلانہ کارروائیوں سے حوصلے پست نہیں کرسکتے۔ عوم اپنی سکیورٹی فورسز کے ساتھ کھڑے ہیں۔

مزید جانئے: کوئٹہ میں پولیس کی گاڑی پر فائرنگ، 2 اہل کار شہید 

وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجو نے کوئٹہ کے علاقہ نوحصارمیں ایف سی کیمپ پر حملہ کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید اہلکاروں کے اہل خانہ کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔ انھوں نے حملہ میں زخمی ہونے والے اہلکاروں کو بہترین طبی سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے۔

عبدالقدوس بزنجو نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ میں سکیورٹی اداروں کا کردار قابل تعریف ہے اور دہشت گردوں کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔

واضح رہے کہ آج صبح ہی کوئٹہ کے علاقے سمنگلی روڈ پر ڈی ایس پی حمید اللہ دستی کی گاڑی پر فائرنگ کے نتیجہ میں 2 پولیس اہلکار شہید ہو گئے۔