بھارتی جارحیت،پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس،وزیر خارجہ کا خطاب



اسلام آباد(24نیوز)بھارتی جارحیت کے بعد پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس شروع ہوگیا ہے،وزیر اعظم پاکستان عمران خان خطاب کررہے ہیں۔وزیر اعظم عمران خان نے خطاب میں کہا ہے کہ اپوزیشن کا شکر گزار ہوں کہ اس نے قوم کو متحد کرنے میں کردار ادا کیا،میں میڈیا کو بھی خراج تحسین پیش کرتا ہوں کہ اس نے ذمہ دارانہ رپورٹنگ کی،پوری قوم اس وقت متحد ہے۔وزیر اعظم نے کل ہی بھارتی پائلٹ کو رہا کرنے کا اعلان کردیا۔

ویڈیو دیکھیں:

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بھارت پہلے ہمیں ڈوزئر دیتا تو ہم ان کی مدد کرتے بھارت نے پہلے کارروائی کی ،پھر ڈوزئیر دیا جب بھارت نے پاکستان پر حملہ کیا تو ہم نے مشاورت کی کہ جواب دیا جائے، ہمیں اس وقت نقصانات کی اطلاع نہیں تھی ہم نے فیصلہ کیا کہ جانی نقصان نہیں ہوا تو کارروائی نہیں کرتے، اگلے دن اپنی صلاحیت دکھانے کے لئے کارروائی کی، ہم نے بتا دیا کہ ہم کیا کر سکتے ہیں بھارتی جہازوں کو مداخلت پر نشانہ بنایا گیا۔

انہوں نے کہا کہ بھارت یہ سب کشمیر کی وجہ سے کررہا ہے،ہم امن چاہتے ہیں،بھارتی وزیر اعظم مودی سے ٹیلی فون پر بات کرنے کی کوشش کی،اب بھی امن کا ہاتھ بڑھاتا ہوں، پلوامہ حملے کے فوری بعد بھارت نے پاکستان پر الزام لگا دیا، ان دنوں سعودی ولی عہد پاکستان آرہے تھے ہم اتنے اہم موقع پر ایسا غیر دانشمندانہ اقدام کیسے کر سکتے تھے، ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو گرے لسٹ میں شامل کر رکھا ہے ہم نے بھارت سے کہا کہ ثبوت دے ہم کاروائی کریں گے، پاکستانی میڈیا کا کردار بہت اچھا رہا ہمارا میڈیا جانتا ہے جنگ کے اثرات کیسے ہوتے ہیں دوسری طرف بھارت جنگی جنون میں مبتلا ہے ہم نے کہا تھا کہ ہم پر حملہ ہوا تو جواب دیں گے۔

بھارتی وزیر اعظم  نریندرمودی دہشت گرد ہے:میاں شہباز شریف

قائد حزب اختلاف شہباز شریف پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں شرکت کے لئے پارلیمنٹ ہاؤس پہنچ گئے،تمام پارٹیوں کے ارکان بھی موجود ہیں۔

ویڈیو دیکھیں:

میاں شہباز شریف نے خطاب میں کہا کہ  انیس سو اکہتر کے بعد بھارت نے عالمی سرحد کی خلاف ورزی کی، پاکستان کے شاہینوں نے موثر کارروائی کی اور انیس سو پینسٹھ کی یاد تازہ کی، میرے وطن کے سجیلے جوانوں والا نغمہ یاد آگیا ،پاک فضائیہ کے افسران اور سپاہی پوری قوم کی تحسین کے حقدار ہیں، پاکستان اپنی دھرتی کے چپے چپے کی حفاظت کرے گا ۔

انہوں نے کہا ہے کہ اسکوارڈن لیڈر حسن صدیقی قوم کے ہیرو اور آنکھوں کے تارے بن چکے ہیں،بھارتی وزیر اعظم  نریندرمودی دہشت گرد ہے، جس نے ہزاروں مسلمانوں کو قتل کرایا تھا، پلوامہ واقعہ کی آڑ میں جنونی کیفیت پیدا کی گئی کہ لڑائی پہلے بار نہیں ہوئی، تین جنگیں پہلے بھی ہوچکی ہیں بھارت نے پاکستان کو کبھی دل سے تسلیم نہیں کیا جنگیں کسی مسئلے کا حل نہیں ہوتی بالآخر ہارنے اور جیتنے والے کو ٹیبل پر بیٹھنا پڑتا ہے ہندوستان کو کشمیریوں کو ان کا حق دینا پڑے گا۔

اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے کہا ہے کہ  بھارت نے کشمیریوں کے لیے جو دنیا سے وعدے کیے تھے ان تمام وعدوں کو پس پشت ڈال دیا ،وعدہ خلافی پر کشمیر میں کشت خون بہتا رہا اور عالمی برادری تماشا دیکھتی رہی، مسلمانوں کی آزادی کی بات آتی ہے تو دنیا تماشا دیکھ رہی ہوتی ہے، فلسطین کی صورت حال کشمیر سے مختلف نہیں ہے ہم نہتے کشمیریوں کی سیاسی اور اخلاقی مدد کرنی ہے تو اپنی صفیں درست کرنی ہو ں گی عالمی سطح پر کشمیریوں کی لیے آواز بلند کرنے کے لئے خود کو معاشی طور پر مضبوط کرنا ہوگا ،کشمیر بنے گا پاکستان کا خواب ایک دن شرمندہ تعبیر ہوگا،امن کی کوششوں کے لیے ہم حکومت کے ساتھ ہیں۔

بھارت امن کی بات مان لے تو بہتر ہوگا:راجہ پرویز اشرف

سابق وزیر اعظم پیپلز پارٹی کے رہنما راجہ پرویز اشرف نے کہا ہے کہ  ہم امن کے خواہاں ہیں لیکن کوئی ہماری سرحدوں کی خلاف ورزی کرے گا تو ہمیں جواب دینا آتا ہے۔ کوئی دو طرفہ نقصان نہیں ہوا۔ہم نے اتنا ہی جواب دیا جتنا ضروری تھا۔ پاکستانی سرحد میں ان کا پائلٹ پکڑنا اور اسکے ساتھ بہتر سلوک کیا گیا۔ بھارتی گرفتار پائلٹ کو واپس حوالے کرنا بہت اچھا تاثر پیش کرتی ہے۔ پاکستان کی افواج دنیا کی بہترین افواج میں شامل ہے، پاکستان پر 26 تاریخ کو حملہ ہوا اس میں کوئی دو رائے نہیں، جس طریقے سے پاک فوج اور پاک فضائیہ نے پوری کاروائی کی پاکستانی قوم کا سرفخر سے بلند ہوگیا، اگر کوئی ہماری حدود کی خلاف ورزی کرے گا تو ہم بھرپور جواب دیں گے ،جنگ ایک خود بہت بڑا مسئلہ ہے، تاریخ گواہ ہے جنگ مسائل کا حل نہیں ہوگا، میں سمجھتا ہوں جتنی جلدی بھارت سمجھ جائے اس کے لیے اتنا ہی بہتر ہوگا، جنگ خوفناک چیز ہے، ملکوں کو ناقابل تلافی نقصان پہنچاتی ہے۔

ویڈیو دیکھیں:

یاد رہے کہ بھارتی طیاروں نے پیر اور منگل کی درمیانی شپ لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پاکستانی حدود میں داخل ہو کر ایمونیشن گرا کر فرار ہوئے جس کا بھرپور جواب دیتے ہوئے اگلے ہی روز پاک فضائیہ نے دو بھارتی لڑاکا طیارے مار گرائے اور ایک پائلٹ کو بھی گرفتار کرلیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer