ملتان میں موسمی انفلوئنزا بے قابو،ایک اور مریض دم توڑ گیا


ملتان (24نیوز) پنجاب بھر میں سیزنل انفلوئنزا سے ہلاکتیں جاری ہیں ، ملتان میں ایک اور مریض جان لیوا وائرس سے دم توڑ گیا،پیتنس سالہ عطااللہ کا تعلق مظفرگڑھ سے ہے،نشتراسپتال ملتان میں وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد اکتالیس تک جا پہنچی ہے، ایک ماہ کے دوران نشتراسپتال میں دو سو چھپن افراد کو انفلوئنزا کے شبے میں نشتراسپتال لایا گیا،ایک سو چھبیس افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی،صرف جنوبی پنجاب میں وائرس سے پچاس افراد جاں بحق ہوئے۔

تفصیلات کے مطابق جنوبی پنجاب میں انفلوئنزا سے اموات کی تعداد 50 ہوگئی، انفلوئنزا نے ایک اور جان چھین لی , 35 سالہ عطا اللہ کا تعلق مظفرگڑھ سے تھا ،  نشتر ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ میں زیر علاج تھا، جنوبی پنجاب میں انفلوئنزا سے مرنے والوں کی ففٹی ہوگئی۔

نشتر ہسپتال میں انفلوئنزا کا 41واں شکار  انفلوئنزا کے دو مریضوں کو صحت یاب ہونے کے بعد ڈسچارج کردیا گیا ، نشتر ہسپتال میں زیرعلاج مریضوں کی تعداد 12 ہوگئی  ۔ تین مریض انتہائی نگہداشت میں زیرعلاج ہیں  جبکہ آٹھ افراد میں وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے ،  چھ ہفتے کے دوران 256 افراد انفلوئنزا کے شبہہ مین نشتر ہسپتال لائے ، 130 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی ، 201 افراد کو صحتیاب ہونے کے بعد ڈسچارج کیا گیا۔

خطرناک وائرس سے 41 افراد نشتر ہسپتال میں جاں بحق ہوچکے ہیں جبکہ  جنوبی پنجاب میں مرنے والوں کی تعدد 50 ہوچکی ہے۔