بدقسمتی سے پاکستان ایلیٹ کلاس کا ملک بن کر رہ گیا :عمران خان



اسلام آباد(24نیوز)وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہائوسنگ منصوبہ کم آمدن والے لوگوں کیلئے ہے،بدقسمتی سے پاکستان ایلیٹ کلاس کا ملک بن کر رہ گیا ہے۔جو زمینوں کی تفصیلات چھپائیں گے وہ جیل میں جائینگے،جلد اس حوالے سے قانون بنارہے ہیں۔

بین الاقوامی ہائوسنگ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جو زمینوں کی تفصیلات چھپائیں گے وہ جیل میں جائینگے،جلد اس حوالے سے قانون بنارہے ہیں۔ہمارے لوگ ٹیکس نہیں دیتے لیکن خیرات دینے میں سب سے آگے ہیں۔

ٹاسک فورس میرے ماتحت ہے، حکومت نے گھروں کی تعمیر نہیں کرنی،حکومت نے نجی سیکٹر کو آسانی فراہم کرنا ہےچین ، ملائیشیا کی کمپنیوں نے ہاؤسنگ اسکیم میں کام کرنےکی دلچسپی ظاہر کی ہے،ورلڈ بینک نے ہاؤسنگ پروگرام میں ہماری سپورٹ کرنےکاکہاہے،ایئرپورٹ کےارد گرد کثیرالمنزلہ عمارتیں بنیں گی،بہت سےسرکاری محکمے حکومت کو اپنی زمین سے متعلق معلومات نہیں دے رہےتھے۔

انہوں نے کہا ہے کہ منصوبے کےافتتاح سے پہلے اپنی تیاری مکمل کرناچاہتے ہیں،ہم لینڈ بینک بنانےکی کوشش کررہےہیں، وزیراعظم عمران خانسرکاری محکموں میں بہت زمینیں ہیں،اسلام آباد سمیت پورے ملک میں بڑے بڑے قبضہ گروپ ہیں،اسلام آبادمیں 500ارب روپے کی زمین واگزار کراچکےہیں، حکومت پر بھروسہ نہیں ہوتا لوگ اس وجہ سےٹیکس نہیں دیتے،اسلام آباد میں کون سا غریب آدمی گھر لے سکتاہے۔

انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں غریبوں کیلیے کوئی منصوبہ بندی نہیں کی گئی،ہاؤسنگ اسکیم میں کچی آبادیوں کوریگولرائز کرنےکیلیے پوری منصوبہ بندی کررہےہیں،ہاؤسنگ اسکیم سے چالیس صنعتوں کو فائدہ ہوگا، بدقسمتی سے ملک ایلیٹ کلاس کابن چکاہے، کوئی بھی معاشرہ ترقی نہیں کرسکتا جب تک غریبوں کو اوپر نہ لایاجائے،ہاؤسنگ اسکیم نچلے طبقے کےلیے ہے، چاہتےہیں نئے نوجوان آئیں،اپنی کمپنیاں بنائیں اور کام کریں،ٹیکس ہم نہیں دیتے،لیکن خیرات سب سے زیادہ دیتےہیں،ہاؤسنگ اسکیموں میں نجی سیکٹر کو کام کرنا چاہیے،جب ہاؤسنگ شروع ہوتی ہے تو اس سے جڑی چالیس انڈسٹریز بھی شروع ہوجاتی ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ خیبرپختونخوا میں ہم نے ایک ارب درخت لگانے کا فیصلہ کیا تھا ، 50لاکھ گھروں کاہدف انتہائی مشکل چیلنج ہے،ہماری ٹاسک فورس بڑی محنت سے کام کررہی ہے،پاکستان میں ایک کروڑ گھروں کی کمی ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer