حدیبیہ پیپرزملز کیس کی سپریم کورٹ میں سماعت، نیب سے متعلقہ رکارڈ طلب


 اسلام آباد(24نیوز): سپریم کورٹ نے نیب سے حدیبیہ کیس سے متعلق تمام رکارڈ طلب کر لیا۔ نیب کی ایک ماہ مہلت مانگنےکی استدعا مسترد کردی گئی۔ سپریم کورٹ کے جسٹس مشیرعالم کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے حدیبیہ کیس کی سماعت کی۔

نیب کے اسپیشل پراسیکیوٹرعمران الحق نے بتایا کہ ہائیکورٹ نے ریفرنس تکنیکی بنیادوں پرخارج کیا۔ جسٹس فائزعیسیٰ نے استفسار کیا کہ اصل ریفرنس کہاں ہے؟ جس پر پراسیکیوٹر نے بتایا کہ انکے پاس اصل ریفرنس نہیں ہے، جسٹس مشیر عالم نے واضع کیا اصل ریفرنس کا ہونا ضروری ہے۔سپیشل پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ پانامہ جے آئی ٹی نے اپنی تحقیقات میں اس کیس کے حوالے سے مزید دستاویزات اکٹھی کی ہیں جس پرعدالت نے جے آئی ٹی رپورٹ کے والیم 8 اور 8 اے منگوا لیے۔ عدالت نے نیب سے حدیبیہ کیس سے متعلق تمام ریکارڈ بھی طلب کرلیا ۔

نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا ہائیکورٹ نے 2014 میں ریفرنس خارج کرتے ہوئے نیب کوازسرنو تحقیقات سے روکا تھا۔ جسٹس فائز عیسٰی بولے کہ ریفرنس طویل مدت کیلیے زیرالتواء نہیں رکھا جا سکتا، عدالت نے نیب سے چیئرمین نیب کی تعلیمی اہلیت سے متعلق تفصیلات بھی طلب کر لیں۔