وطن واپس پہنچ گئے


اسلام آباد( 24نیوز )چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار دورہ لندن کے بعد واپس وطن پہنچ گئے۔

چیف جسٹس پی آئی اے کی پرواز پی کے 786 سے اسلام آباد ایئرپورٹ پہنچے، چیف جسٹس کچھ دیر میں سپریم کورٹ پہنچ کر اہم مقدمات کی سماعت کریں گے۔

کورٹ روم نمبر ایک میں مختلف مقدمات کی سماعت کریں گے، ان کی سر برا ہی میں جسٹس فیصل عرب اور جسٹس اعجاز الاحسن پر مشتمل تین رکنی بنچ آئی جی اسلام آباد تبادلہ کے حوالے سے ازخودنوٹس کیس میں وفاقی وزیرسینیٹر اعظم سواتی کی جانب سے مداخلت ، ان کی اپنی اور فیملی کی جائیدادوں کی تفصیلات کے بارے میں کیس کی سماعت کرے گا۔

دورہ لندن کے دوران چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے برطانیہ میں مقیم پاکستانی نڑاد ڈاکٹروں کو واپس آکر اپنے وطن میں کام کرنے کی دعوت دی ہے۔چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ برطانیہ میں مقیم پاکستانی ڈاکٹرز پاکستان میں صحت کا شعبہ بہتر بنائیں، انہوں نے یہ بھی کہا ہے کہ جو سلوک کسی اور کیساتھ کیا جائے گا وہی علیمہ خان کے ساتھ بھی ہوگا ،قوم کو ہم سے انصاف کی توقع رکھنی چاہیے۔

یاد رہے چیف جسٹس ثاقب نثار کے دورہ برطانیہ کے دوران دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کی فنڈریزنگ تقریبات میں ایک ارب روپے کے لگ بھگ رقم جمع کر لی گئی۔لندن، مانچسٹر اور برمنگھم میں تقریبات کے دوران چیف جسٹس کی اپیل پر متمول پاکستانیوں نے دل کھول کر حصہ ڈالا، ان عشائیوں میں شرکت کیلئے گنجائش سے کہیں زیادہ افراد کی درخواستیں آئیں اورکئی مقامات پر ہجوم کو کنٹرول کرنے کیلئے سکیورٹی کو بھی بلانا پڑا، ان تقریبات کیلئے فی ٹیبل1500 اور1000پاو¿نڈ ٹکٹ رکھی گئی تھی،مانچسٹر کی تقریب میں23لاکھ پاونڈ جمع ہوئے۔

خیال رہے ہوٹل سے ایئر پورٹ روانگی سے قبل انہوں نے اوکسفرڈسٹریٹ کا دورہ کیا ، جہاں چیف جسٹس کو دیکھ کر پاکستانی خوشی سے نہال ہو گئے اور ان کے ساتھ سیلفیاں بنوائیں۔