فائزہ اغوا کیس،معاملہ نیا رخ اختیار کر گیا

فائزہ اغوا کیس،معاملہ نیا رخ اختیار کر گیا


کراچی (24 نیوز) آٹھ ماہ کی فائزہ کو اغوا کیا گیا یا ماں نے خود بچی کو ملزم کے حوالے کیا؟ ملزم عمران نے عدالت میں بیان دیا ہے کہ اس نے بچی کو اغوا نہیں کیا،بلکہ وہ بچی کا والد ہے عدالت نے عمران کا ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا حکم دے دیا ، جبکہ بچی کی ماں کو بھی جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں 8 ماہ کی بچی فائزہ کو اغوا کرنے کے کیس کی سماعت ہوئی، جس کے دوران پولیس نے کیس میں گرفتار ملزم عمران اور بچی کی والدہ کو عدالت میں پیش کیا گیا ۔دوران سماعت عدالت نے ملزم عمران سے استفسار کیا کہ تم نے بچی کو کیوں اغوا کیا ؟  جس پر ملزم عمران نے موقف اپنایا کے میں بے گناہ ہو ں، جس پر عدالت نےپوچھا تو پھر بچی تمہارے پاس کیسے آئی اور کس نے دی ؟ عدالتی استفسار پر ملزم نے بولا کے یہ بچی میری ہے میں اس کا والد ہوں ، بچی مجھے اس کی والدہ انیسہ نے دی۔

دوران سماعت عدالت نے ملزم عمران کا ڈی این اے ٹیسٹ کرانے کا حکم دیتے ہوئے 3 اکتوبر تک جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا ، جبکہ دوسری جانب عدالت نے بچی کی والدہ انیسہ کو حقائق چھپانے کے الزام میں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم سنایا۔ عدالت کا مزید کہنا تھا کہ بچی فائزہ بھی اپنی ماں کے ساتھ جیل میں رہے گی اور جیل میں تمام ضروری سہولیات فراہم کی جائیں۔