پشاور طلبہ کا فیسوں میں اضافے کے فیصلے کے خلاف احتجاج تیسرے روز بھی جاری

پشاور طلبہ کا فیسوں میں اضافے کے فیصلے کے خلاف احتجاج تیسرے روز بھی جاری


 پشاور(24نیوز):جامعہ پشاور میں طلبہ کی جانب فیسوں میں اضافے کے فیصلے کے خلاف احتجاجی دھرنا تیسرے روز میں داخل ہوگیا۔ یونیورسٹی انتظامیہ اور طلبہ کے درمیان تین بار مذاکرات ناکامی کا شکار ہوئے، یونیورسٹی میں تدریسی عمل آج بھی بری طرح متاثر رہا۔

پشاور یونیورسٹی میں طلبہ کی جانب 10فیصد فیسوں میں اضافے کے فیصلے کے خلاف احتجاج تیسرے روز میں داخل ہوگیا۔ جامعہ میں تیسرے روز بھی تعلیمی سرگرمی معطل رہی جبکہ طلبہ کی جانب سے انتظامیہ اور وایس چانسلر کے خلاف شدید نعرے بھی کی گئی۔طلبہ تنظیم اور جامعہ کی انتظامیہ کے درمیان تین بار مذاکرات ہویے مگر تینوں بار مذاکرات ناکامی کا شکار ہویے۔ طلبہ اور انتظامیہ اپنے اپنے موقف پر ڈٹ گئے۔

طلبہ نے الزام لگایا کہ سالانہ فیسوں میں10فی صد اضافہ دراصل 15یا20فی صد سے بھی زیادہ ہوتا ہے۔ انتظامیہ کے مطابق طلبہ کے تمام جایز مطالبات منظور کرلیے گیے مگر فیسوں میں اضافے کا معاملہ سینڈیکیٹ اجلاس میں اٹھایا جایے گا جسے طلبہ ہر گز ماننے کو تیار نہیں ہے۔