نیب نے وفاقی وزیر مواصلات اور ان کے 2بیٹوں کے خلاف تحقیقات شروع کر دی


ملتان(24نیوز):نیب ملتان نے وفاقی وزیر مواصلات حافظ عبد الکریم، ان کے 2 بیٹوں اور غازی یونیورسٹی کے رجسٹرار سمیت دیگر کے خلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ وفاقی وزیر کے ساتھ غازی یونیورسٹی کے رجسٹرار ڈاکٹر نجیب حیدر اور ڈاکٹر ندیم احمدانی بھی ملوث رہے اور بنک اکاؤنٹس چلاتے رہے۔

نیب ذرائع کے مطابق تحقیقات انڈس انٹرنیشنل انسٹیوٹ ڈی جی خان کے دو طلبا شیرافگن اور اسجد رحمان کی درخواستوں پر شروع کی گئی ہیں، ذرائع کے مطابق انڈس انٹرنیشنل انسٹیوٹ میں طلبہ و طالبات سے چالیس کروڑوں روپے فیسیں بٹوری گئیں ، طلبا و طالبات کو جعلی رزلٹ کارڈز کا اجرا کرکے ان کو دھوکہ دیا گیا۔ وفاقی وزیر کے ساتھ غازی یونیورسٹی کے رجسٹرار ڈاکٹر نجیب حیدر اور ڈاکٹر ندیم احمدانی بھی ملوث رہے اور بنک اکاؤنٹس چلاتے رہے۔

 نیب ملتان وفاقی وزیر مواصلات کی ملتان اور ڈی جی خان میں اربوں روپے کی بے نامی جائیدادوں کی بھی تحقیقات کرے گی۔وفاقی وزیر اور ان کے بیٹوں اسامہ عبدالکریم اور انس عبدالکریم نے تین دینی مدارس اور الفلاح ڈویلپمینٹ آرگنائزیشن بھی بھی بنا رکھی ہے، ان کے نام پر بیرون ملک سے حاصل کی جانے والی فنڈنگ کی بھی تحقیقات کی جائیں گی،وفاقی وزیر نے انڈس انسٹیوٹ اور الفلاح آرگنائزیشن کو اِنکم ٹیکس میں بھی ظاہر نہیں کیا۔