"احتجاج کرنیوالے ریاست سے نہ ٹکرائیں ورنہ ہم اپنی ذمہ داری پوری کریں گے"


اسلام آباد(24نیوز) وزیراعظم عمران خان نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ آسیہ بی بی کا فیصلہ آئین کے مطابق کیا گیا ہے۔ آئین کے مطابق کیے جانے والے فیصلے کیخلاف  احتجاج کرنا  اسلام کی خدمت نہیں، ملک دشمنی ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا  کہ آسیہ بی بی کے فیصلے پر چھوٹے طبقے نے ردعمل ظاہر کیا ہے، ججز نے آئین کے مطابق فیصلہ کیا ہے۔ پاکستان کا آئین قرآن و سنت کے تابع ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ احتجاج کرنیوالوں نے ججوں کو واجب القتل قرار دیا ہے،  ججز کو قتل کرنے کی باتیں کرنے والے  ملک دشمن عناصر ہیں اور یہ عناصر  عوام کو اکسا رہے ہیں۔ آسیہ بی بی کے فیصلے کے بعد بعض لوگ یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ فوج کے جنرلز آرمی چیف کے خلاف بغاوت کریں۔

وزیراعظم  کا قوم سے خطاب میں کہنا تھا کہ اس طرح کا احتجاج اسلام کی خدمت نہیں، ملک دشمنی ہے، اگر یہ عناصر اپنے احتجاج سے باز نہ آئے تو ریاست اپنی رٹ قائم کرے گی۔ انھوں نے کہا کہ سڑکیں بند ہونے سے لوگوں کا روزگار متاثر ہو رہا ہے، قوم ان لوگوں کی باتوں میں نہ آئے۔

وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان ریاست مدینہ کے اصولوں پر چل کر عظیم ملک بنے گا،  نبی کریم ﷺ کے عشق کے بغیر ایمان مکمل نہیں، نبی کریم ﷺ کی شان میں گستاخی برداشت نہیں کریں گے۔ انھو ں نے کہا کہ پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنا کر رہیں گے۔

وقار نیازی

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔